پاکستانی سائنسدان مصنوعی جلد تیار کرنے میں کامیاب ہوگئے

67

لاہور (اے پی پی) صوبائی وزیر صحت پنجاب پروفیسر ڈاکٹر یاسمین راشد نے انکشاف کیا ہے کہ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کے سائنسدانوں نے مصنوعی جلد کی تیاری (اسکن کلوننگ) میں کامیابی حاصل کرلی ہے، جو بائیولوجیکل اسکن پہلے ہزاروں ڈالرز میں بیرون ملک سے منگوانا پڑتی تھی اس کی جگہ اب پاکستان میں وہی جلد 720 روپے میں دستیاب ہوگی۔ ہفتے کے روز یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز (یو ایچ ایس) میں پانچویں سالانہ اناٹومی سائنٹفک کانفرنس سے بطور مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے
انہوں نے اسکن کلوننگ میں کامیابی پر یو ایچ ایس کے وائس چانسلر پروفیسر جاوید اکرم اور ان کی ٹیم کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ یونیورسٹیوں میں ریسرچ پر مبنی تعلیم وقت کی ضرورت ہے۔ خوش ہوں کہ یو ایچ ایس کے سائنسدانوں نے بائیولوجیکل اسکن ایجاد کرلی، پاکستان میں کلون شدہ بائیولوجیکل اسکن انتہائی سستی ہے۔ 720 روپے میں مصنوعی جلد ایک اہم پیشرفت ہے۔ کانفرنس کا اہتمام اناٹومیکل سوسائٹی آف پاکستان نے کیا تھا۔ وائس چانسلر پروفیسر جاوید اکرم، صدر پی ایم اے پنجاب ڈاکٹر اظہار، صدر اے پی ایس پروفیسر نوشین عمر نے بھی خطاب کیا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ