چیئرمین سینیٹ کی دھمکی پر فواد چودھری نے مشاہد اللہ سے معافی مانگ لی

99

اسلام آباد (صباح نیوز) چیئرمین سینیٹ کی جانے سے ایوان سے نکالنے کی دھمکی پر فواد چودھری نے مشاہد اللہ سے معافی مانگ لی، حکومت اور اپوزیشن میں سینیٹ میں صلح ہوگئی ۔چیئرمین سینیٹ نے مذاکرات کا کامیابی کا اعلان کردیا۔ پیر کو سینیٹ کا وقفہ سوالات جاری تھا اس دوران اشتہارات سے متعلق سینٹر کلثوم پروین کے سوال کے جواب کے لیے وفاقی وزیراطلاعات ونشریات فوادچودھری کھڑے ہوئے تو سینیٹرمشاہداللہ نے مطالبہ کیا کہ چیئرمین سینیٹ کی رولنگ کے مطابق فواد چودھری پہلے معافی مانگیں چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی نے لیگی سینیٹر کے مطالبے کو درست قراردیا اور وفاقی وزیر اطلاعات کو معذرت کرنے کی ہدایت کی۔ معذرت نہ کرنے پر اجلاس کا ماحول ایک بار پھر کشیدہ ہوگیا قائد ایوان شبلی فراز نے کہا کہ کئی دنوں نے ایجنڈے پر عملدرآمد نہیں ہورہا ہے بزنس رکا ہوا ہے ۔چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ وزیراطلاعات معذرت کرلیں، فواد چودھری نے اپنے الزامات دہرادیے جس پر ایوان بالا میں شورشرابا شروع ہوگیا۔ چیئرمین سینیٹ نے وفاقی وزیراطلاعات ونشریات پر برہمی کا اظہارکرتے ہوئے انہیں سینیٹ سے نکالنے کی دھمکی دے دی جس پر فواد چودھری نے اپوزیشن رہنما مشاہداللہ خان سے معذرت کرلی اور کہا کہ گزشتہ دنوں ان کی تلخ کلامی سے کسی کا دل دکھا ہے تو معذرت کرتے ہیں، تاہم انہوں نے ساتھ ساتھ پی آئی اے میں بھرتیوں کے حوالے سے مشاہد اللہ خان کے رشتے داروں کی فہرست پڑھ دی جس سے مشاہداللہ خان نے لاتعلقی کا اظہارکردیا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ