مٹھی میں غذائی قلت کے باعث بچوں کی ہلاکتیں7ہو گئیں

24

مٹھی(آن لائن) سندھ کے ضلع تھرپارکر کے مرکزی شہر مٹھی میں غذائی قلت اور وبا پھیلنے سے 2 روز میں 7بچے جاں بحق ہوگئے۔ رواں سال 393بچے جاں بحق ہوگئے ہیں۔ محکمہ صحت کے مقامی حکام کے مطابق مختلف انفیکشن کے شکار70 سے زائد بچوں کو ضلع کے 6 مختلف مراکز میں داخل کیا گیا ،رواں سال کم بارشوں کے باعث یہاں بدترین خشک سالی کا سامنا ہے ، عوام کا حکومت سندھ سے مطالبہ ہے کہ وہ خطے کو خشک سالی سے متاثرہ علاقہ قرار دے کر ہنگامی ریلیف کا آغاز کریں،جو لوگ قریبی علاقوں میں اپنے مویشیوں کے ساتھ ہجرت کرنا چاہتے ہیں حکومت ان کی مدد کرے۔سابق صوبائی حکومت کی جانب سے تھر کے 2 لاکھ 87 ہزار غریب خاندانوں میں مفت گندم تقسیم کی منظوری دی گئی تھی اور سابق چیف سیکرٹری کو گندم کی تقسیم کا عمل فوری طور پر بحال کرنے اور اپریل کے آخر تک اسے مکمل کرنے کی ہدایت بھی کی تھی۔تاہم ان سب احکامات پر عمل نہیں ہوا تھا،اس واقعے پر چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے ازخود نوٹس بھی لیا تھا اور سابق سیکرٹری صحت کو رپورٹ جمع کرانے کا حکم اور اموات کے معاملے پر غیر جانبدار ماہر ڈاکٹروں پر مشتمل کمیٹی بنانے کا بھی کہا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ