امریکی ماہرین کی جانب سے پاکستان میں حیواناتی بیماریوں سے بچاؤ کی منصوبہ بندی میں اعانت 

199
اسلا م آباد:بیماریوں سے بچاؤ اور انسداد کے مرکز،سینٹرز فار ڈزیز کنٹرول اینڈ پری وینشن ( سی ڈی سی ) اور امریکی محکمہ زراعت ( یو ایس ڈی اے ) کی جانب سے نیشنل ون ہیلتھ فریم ورک اینڈ اسٹریٹجک پلان ڈیویٹپم کی تیاری میں پاکستان کومدد فراہم کرنے کی غرض سے ۱۶سے۲۰ ِجولائی تک ایک تربیتی نشست کا انعقاد کیا گیا۔ اس تربیتی ورکشاپ کا مقصد انسانوں اور حیوانوں کے درمیان منتقل ہونے والی ربیز اور بروسیلوسسجیسی زونوٹک ( حیوانی ) بیماریوں کے بارے میں آگہی پیدا کرنا تھا۔

پاکستان نے حال ہی میں نیشنل انسٹیٹیوٹ آف ہیلتھ میںایک مرکز ،ون ہیلتھ حب قائم کیا ہے جو کہ انسانی، حیوانی اور ماحولیاتی صحت کے شعبوں کے درمیان “زونوٹک” بیماریوں کے بارے میں رابطہ اور تعاون کو یقینی بنانے کے لیے اعانت کرے گا۔ یہ ورکشاپ حکومت پاکستان کی جانب سے اس درخواست کے بعد منعقد کی گئی کہ ملک میں وبائی امراضسے بچاؤ، اُن کی تشخیص اور نمٹنے کے لیے جامع حکمت عملی مرتب کرنے کی غرض سے پاکستان کو فنی امداد فراہم کی جائے۔

اس کے ساتھ ساتھ سی ڈی سی اور یو ایس ڈی اے کے ماہرین نے ربیز اور بروسیلوسس کی روک تھام کے لیے حکمت عملیوں پر بھی تبادلہ خیال کیا۔ حکومت پاکستان نے اگست ۲۰۱۷ ء میں ہونے والی اسی نوعیت کی ایک ورکشاپ میںوضع کی گئی ترجیحات میں مذکورہ بیماریوں کا خاتمہ بھی شامل کیا تھا۔

اس ورکشاپ میں صحت عامہ ، خوراک کی سلامتی وتحقیق، موسمیاتی تبدیلی ، لائیو اسٹاک کی وفاقی وزارتوں، صوبائی محکموں ، گلگت بلتستان ، اسلام آباد اور آزاد کشمیر کے متعلقہ اداروں نے بھی شرکت کی۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ
mm
قاضی جاوید سینئر کامرس ریپورٹر اور کامرس تجزیہ، تفتیشی، اور تجارتی و صنعتی،معاشی تبصرہ نگار کی حیثیت سے کام کرنے کا وسیع تجربہ رکھتے ہیں ۔جسارت کے علاوہ نوائے وقت میں ایوان وقت ،اور ایوان کامرس بھی کرتے رہے ہیں ۔ تکبیر،چینل5اور جرءات کراچی میں بھی کامرس رپورٹر اور ریڈیو پاکستان کراچی سے بھی تجارتی،صنعتی اور معاشی تجزیہ کر تے ہیں qazijavaid61@gmail.com