فلوریڈا میں تباہی پھیلانے کے بعد ’مائیکل‘ کیرولائنا کی جانب

57
تالاہاسی: امریکی ریاست فلوریڈا کے ساحل سے مائیکل طوفان کے ٹکرانے سے ہونے والی تباہی
تالاہاسی: امریکی ریاست فلوریڈا کے ساحل سے مائیکل طوفان کے ٹکرانے سے ہونے والی تباہی

تالاہاسی (انٹرنیشنل ڈیسک) سمندری طوفان مائیکل فلوریڈا اور جارجیا میں تباہی مچانے کے بعد اب جنوبی اور شمالی کیرولائنا کی جانب بڑھ رہا ہے۔ امریکی حکام کے مطابق طوفان کی شدت میں نمایاں کمی آچکی ہے۔ مقامی حکام نے14 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کردی، جن میں سے ایک 11 سالہ بچی جارجیا میں مکانات پر درخت گرنے سے ہلاک ہوئی۔طوفان بدھ کی دوپہر فلوریڈا کے ساحل سے ٹکرایا تھا۔ زمین سے ٹکرانے سے قبل طوفان کی شدت دوسرے درجے سے بڑھ کر چوتھے درجے میں پہنچ گئی تھی جو انتہائی شدت کے طوفان سے صرف ایک درجہ کم تھی۔ اس دوران13 فٹ تک بلند لہریں ساحلی علاقوں سے ٹکرائیں۔طوفان کے بعد 320 کلومیٹر طویل اور 80 سے 160 کلومیٹر چوڑی پین ہینڈل پٹی کےعلاقوں میں ہر طرف تباہی کے مناظر نظر آئے۔سڑکیں طوفانی ہواؤں کے باعث اکھڑنے والے درختوں، کھمبوں اور مکانات کے ملبے سے اٹی ہوئی تھیں، جب کہ کئی نشیبی ساحلی علاقوں میں تاحال پانی کھڑا ہے۔ فلوریڈا، الاباما اور جارجیا کی ریاستوں 4لاکھ گھروں کو بجلی کی ترسیل معطل رہی۔ فلوریڈا کے مشہور سیاحتی مقام میکسیکو بیچ پر 280 رہایشیوں کے متعلق تاحال کوئی اطلاع نہیں مل سکی۔انہوں نے انخلا کے احکامات کے باوجود علاقہ چھوڑنے سے انکار کردیا تھا۔ اندازوں کے مطابق 3لاکھ سے زائد رہایشیوں نے اپنے علاقوں سے انخلا کے احکامات نظر انداز کردیے تھے۔ متاثرہ علاقوں میں لوٹ مار روکنے کے لیے بدھ کی شام سے کرفیو نافذ ہے۔
مائیکل طوفا
ن

Print Friendly, PDF & Email
حصہ