مثبت صحافت سےتارکین وطن کے مسائل اجاگر کیے جا سکتے ہیں‘ منیراحمد شاد

32

سعودی دارالحکومت ریاض میں یونائیٹڈ میڈیا فورم کا قیام عمل میں لایا گیا، اس حوالے سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صدر یونائیٹڈ میڈیا فورم منیر شاد کا کہنا تھا کہ ہم مثبت صحافت سےتارکین وطن کے مسائل اجاگر کرسکتے ہیں۔ آج کے جدید دور میں میڈیاایک ایسا آلہ بن چکا ہے جو معلومات، اطلاعات اور مواد پیش کرنے کا بہترین ذریعہ ہے۔ میڈیا کا کردار کسی بھی معاشرے میں ایک آئینے کے مانند ہوتا ہے جو اس میں پھیلی خرابیوں اور کمزوریوں کی نشان دہی کرتا ہے۔ تیزی سے بدلتے ہوئے دور میں پرنٹ اور الیکٹرانک کی اہمیت بڑھتی جا رہی ہے اور اس کی وجہ سے ہماری زندگی پر کئی مثبت اور منفی اثرات بھی مرتب ہوتے ہیں۔ اسی لیے کہا جاتا ہے کہ میڈیا کسی بھی معاشرے کو سنوارنے یا بگاڑنے میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔ مثبت سیاست کو پروان چڑھانے اور دیار غیر میں موجود پاکستانی برادری کی آواز ایوان بالا تک پہنچانے کے لیے یونائیٹڈ میڈیا فورم کا قیام عمل میں لایا گیا ہے۔
تقریب میں ریاض کی سیاسی، سماجی، ادبی اور مذہبی جماعتوں کے عہدے داران کے ساتھ پاکستانی برادری کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ پروگرام کا آغاز تلاوت کلام پاک سے ہوا، جس کی سعادت قاری محمد قاسم نے حاصل کی۔ نعت حافظ عرفان کھٹانہ نے پڑھی جبکہ نظامت کے فرائض یونائیٹڈ میڈیا فورم کے سینئر ایگزیکٹو ممبر ملک کامران نے اپنے شاعرانہ انداز میں بخوبی انجام دیے۔ جنرل سیکرٹری وسیم خان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمارا مقصد صرف مثبت سوچ کے ساتھ مثبت صحافت کرنا ہے اور اس کے لیے برادری کی خدمت پر بھرپور توجہ دی جائے گی کیونکہ جمہوری عمارت کی بنیاد آزادی رائے ہی پر کھڑی ہوتی ہے۔ سینئر ایگزیکٹو ممبر خرم خان کا کہنا تھا کہ ہماری پوری ٹیم کی بھرپور کوشش ہو گی کہ بہتر انداز میں کمیونٹی کے تمام پروگرامز کو بھرپور کوریج دی جائے۔ میڈیا خوشیوں کی کی تقریبات کو چار چاند لگا دیتا ہے۔ تقریب سے صدر پاک کشمیر میڈیا فورم (سعودی عرب) حافظ عرفان کھٹانہ نے بھی خطاب کیا۔ اے ۔آر اسپورٹس کے چیئرمین آصف شیخ اور الفنار ٹی ایس ایم کے ہیڈ آف ڈیپارٹمنٹ افتخار ہاشمی کی طرف سے صدر منیر شاد اور ان کی ٹیم کو شیلڈ پیش کی گئی۔ خواتین کا شکریہ ادا کیا گیا۔ اختتامی دعا حافظ عبدالوحید نے کی۔ تقریب کے اختتام پر مہمانوں کے لیے عشایئے کا اہتمام کیا گیا تھا۔