سی پیک پر نظرثانی نہیں ہورہی‘ امریکا بھارت اعلامیہ ‘ مسترد کرتے ہیں ‘ دفتر خارجہ 

120

اسلام آباد ( آن لائن ) ترجمان دفترخارجہ ڈاکٹر فیصل کا کہنا ہے کہ سی پیک معاہدوں پر نظرثانی نہیں ہورہی۔ دفترخارجہ میں ہفتہ وار پریس بریفنگ کے دوران ان کا کہنا تھاکہ امریکا بھارت مشترکہ اعلامیہ مسترد کرتے ہیں، الزامات کے حوالے سے پاکستان نے واشنگٹن کو تحفظات سے آ گاہ کر دیا ہے ، ہمسایہ ملک بھارت کے ساتھ مذاکرات کے لیے تیار ہیں، دونوں ممالک کے مابین حل طلب تمام معاملات کا حل بات چیت کے ذریعے ہی ممکن ہے۔ترجمان نے کہا کہ پاکستان افغان مسئلے کا حل وہاں کے لوگوں کے ہاتھوں تلاش کرنے کی حمایت کرتا ہے ، وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اپنا پہلا بیرون ملک دورہ افغانستان کا کریں گے ، جہاں افغان پاک ایکشن پلان پرتبادلہ خیال کیا جائے گا، جلال آباد کا کونسل دفتروقتی طور پر بند کیا گیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان ایران کے ساتھ گیس پائپ لائن منصوبہ مکمل کرنا چاہتا ہے۔ ڈاکٹر فیصل نے بتایا کہ وزیراعظم عمران خان سعودی عرب کا دورہ کریں گے البتہ تاریخ کا اعلان بعد میں کیا جائے گا۔انہوں نے بتایا کہ بحرین میں ویزے کی سختی صرف پاکستان نہیں دیگر کئی ممالک کے ساتھ کی گئی ہے، وزیر خارجہ کی سطح پر اس معاملے پر رابطے میں ہیں جب کہ بحرین کے حکام نے تعاون کی یقین دہانی کروائی ہے۔ایف اے ٹی ایف سے متعلق ایک سوال کے جواب میں ترجمان کا کہنا تھاکہ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کے حوالے سے کافی کام ہو رہا ہے۔ برطانیہ میں تعینات پاکستانی ہائی کمشنر کے حوالے انہوں نے بتایا کہ صاحبزادہ احمد خان کو غیر ذمے دارانہ سرگرمیوں پر دفترخارجہ طلب کیا گیا ہے اور وزیر خارجہ نے ان سے تحریری وضاحت طلب کی ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارت کے ساتھ سکھ یاتروں کے لیے بارڈر کھولنے پر اب تک کوئی پیش رفت نہیں ہوئی ،البتہ اگر بھارت چاہے تو پاکستان سرحد کھولنے کے لیے تیار ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.