بدمعاش اور لٹیرے عدالتوں سے وکٹری کا نشان بنا کر نکلتے ہیں، امیر العظیم

65

 

لاہور (نمائندہ جسارت) جماعت اسلامی پاکستان کے سیکرٹری جنرل امیرالعظیم نے کہا ہے کہ پاکستان کی سیاسی اشرافیہ کو عد التوں نے اب تک جتنا ریلیف دیاہے اس کی کوئی مثال ماضی میں نہیں ملتی ۔ان عدالتوں میں عام آدمی خوف کے ساتھ داخل ہوتا ہے اور ذلت کے ساتھ باہر آتا ہے جبکہ بدمعاش اور لٹیرے ان عدالتوں سے وکٹری کا نشان بناتے ہوئے نکلتے ہیں۔ آصف زرداری ، حمزہ شہبازاور الطاف حسین کی گرفتاری اللہ کی پکڑ ہے اور طاقت کے گھمنڈ میں مبتلا رہنے والی اشرافیہ کے لیے اس میں غوروفکر کا بہت ساسامان ہے ۔ آصف زرداری کی گرفتاری پر فردوس عاشق اعوان اوران کے ہمنواجوبغلیںبجارہے ہیںان
کی ڈھٹائی پر حیرت ہے، یہ لوگ توبہتی گنگا کے وقت سابق صدر کے ساتھی رہے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گوجرانوالہ میں عید ملن کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اجتماع سے ضلعی امیر ڈاکٹر عبید اللہ گوہر اورسٹی گوجرانوالہ کے امیر مظہر رندھاوا نے بھی خطاب کیا۔ امیرالعظیم نے کہاکہ بطور شہری اور انسان ہم کسی کی گرفتاری یا تکلیف پر خوشی کا اظہار نہیں کرسکتے لیکن یہ رہنما اپنی ماضی کی غلطیوں پر قوم سے معافی مانگیںاور آئندہ سدھرنے کی کوشش کریں۔ امیرالعظیم نے مزید کہاکہ حکومت کی منافقانہ پالیسی بے برکتی اور عوام میں مایوسی پیدا کر رہی ہے ۔و زیراعظم اپنے خطاب میں جذبہ خیرکاحوالہ دے کر ٹیکس نیٹ بڑھانے کی اپیلیںکرتے ہیںاور اسی سانس میں ٹیکس ایمنسٹی جیسی بے شرم اسکیم کا بھی کریڈٹ لیتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ عوام ٹیکس دینے پر بخوشی راضی ہوسکتے ہیںجب بنی گالہ،رائے ونڈاور بلاول ہائوس کے محلات والے حکمران اپنا معیار زندگی عام آدمی کی سطح پرلے آئیںیا عام آدمی کا معیار زندگی اپنی سطح پر لے جائیں۔
امیرالعظیم