پاکستانی ٹیم کے بارے میں پیشگوئی نہیں کی جاسکتی،مکی آرتھر

95

لندن(جسارت نیوز )قومی کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ مکی آرتھر اس بات سے ناخوش ہیں کہ بہترین کارکردگی کی مالک پاکستانی ٹیم کو ناقابل پیشگوئی قرار دیا جائے کیونکہ اس ٹیم پر جو محنت کی گئی اس کے سہارے یہ ٹاپ فور میں جگہ بنائے گی۔مکی آرتھر نے پی سی بی کی جانب سے جاری کردہ ویڈیو میں واضح کیا کہ ناقابل پیشگوئی جیسے لفظ سے ان کا کوچنگ سٹاف نفرت کرتا ہے اور وہ بھی اس سے خوش نہیں ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ حالیہ تمام تجزیوں میں پاکستانی ٹیم کو اس کے ناقابل پیشگوئی ہونے کے ناطے آخری چار ٹیموں میں شامل ہوتے دیکھا جا رہا ہے لیکن وہ اس بات سے انکار کرتے ہیں کیونکہ پاکستانی ٹیم ٹاپ فور میں اس وجہ سے شامل ہو گی کہ اس پر محنت کی گئی ہے اور اس میں اس مقام تک رسائی کی اہلیت موجود ہے۔واضح رہے کہ آسٹریلیا کیخلاف یو اے ای میں پانچ،صفر سے مات کھانے والی گرین شرٹس سائیڈ کو اپنے بہترین پلیئرز کی خدمات حاصل نہیں تھیں البتہ مکمل مضبوط ٹیم اب انگلینڈ میں کافی بہتر کارکردگی کی مالک دکھائی دے رہی ہے۔مکی آرتھر کے مطابق انہوں نے اچھے اور برے پہلوں کو قریب سے دیکھ لیا ہے کیونکہ پلیئرز تسلسل کے ساتھ ایک ہی برانڈ کی کرکٹ کھیل رہے ہیں جن کی ٹریننگ اور روزمرہ کے معمولات کا ایک سٹرکچر بن چکا ہے جس نے ناقابل پیشگوئی ہونے کے تاثر کو ختم کردیا ہے اور سب جانتے ہیں کہ اپنے دن یہ ٹیم کسی کو بھی ہرا سکتی ہے اور اہم اجزائے ترکیبی کی بدولت کھلاڑیوں کا اعتماد اور بھروسہ تلاش کرلیا گیا ہے۔