کیا پنجاب حکومت قبضہ مافیا بن گئی؟عدالت عظمیٰ ۔ شیخ رشید کیخلاف توہین عدالت کیس میں کمشنر اور دیگر طلب

107

اسلام آباد( آن لائن ) عدالت عظمیٰ نے وزیر ریلوے شیخ رشیدکے خلاف توہین عدالت کیس میں کمشنر اورڈپٹی کمشنرراولپنڈی کو آج طلب کرلیا۔ عدالت نے ریمارکس دیے کہ ایک گھنٹے کیلیے جانا تھا،ایک فیتہ کاٹنا تھا، جس کے لیے گرلز گائیڈ کی دیواریں گرادی گئیں، درخت کاٹ دیے گئے، کیا پنجاب حکومت قبضہ گروپ بن گئی ہے۔جسٹس عظمت سعید کی سربراہی میں 3رکنی بینچ نے درخواست کی سماعت کی۔دور ان سماعت جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ گرلز گائیڈ کی عمارت میں بچیاں ہیں اور ان کی سرگرمیاں ہوتی ہیں‘دیواریں گرانے سے سب عیاں ہورہا ہے۔جسٹس عظمت سعید شیخ نے کہاکہ کمشنر اور ڈپٹی کمشنر ہمارے حکم کی خلاف ورزی کر رہے ہیں،پھر کسی اور کو کہنا پڑے گا، جس پر ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کا کہنا تھا امید ہے بات یہاں تک نہیں پہنچے گی۔علاوہ ازیں نیب نے شہباز شریف اور فواد حسن فواد کی طرف سے آشیانہ ہائوسنگ اسکیم میں کس طرح اختیارات کا غلط استعمال کیا تفصیلی جواب عدالت عظمیٰمیں جمع کرادیا ہے نیب کی طرف سے جمع کرائے گئے 7صفحات پر مشتمل جواب میں کہا گیا ہے شہباز شریف فواد حسن فواد اور احد چیمہ نے کرپشن کی جس کے دستاویزی اور زبانی شواہد موجود ہیں۔قبل ازیں عدالت عظمیٰ میں سینٹورس مال تجاوزات کیس میں چیئرمین سی ڈی اے کو سروس روڈ واگزارکرانے کا حکم دے دیا ۔قائم مقام چیف جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دیے کہ اسلام آباد ہر گزرتے دن کے ساتھ تباہ ہورہا ہے ،کہیں اسے لاہور یا پشاور سے ملانے کا ارادہ تو نہیں ۔ معاملہ کی سماعت جمعہ تک ملتوی کردی ۔