افغانستان انتخابی مہم کے دوران دھماکہ 15 خواتین ہلاک،35 زخمی

91

کابل(آن لائن)انتخابی مہم کے دوران دھماکا، 15 خواتین ہلاک،35 زخمی۔تفصیلات کے مطابق افغانستان میں انتخابی مہم کے دوران دھماکے میں 15 افراد ہلاک جبکہ 35 زخمی ہوگئے، مرنے والوں میں زیادہ تر خواتین شامل ہیں ۔فرانسیسی خبر رساں ادارے کے مطابق یہ واقعہ افغانستان کے صوبے تاخر کے شمال مشرقی حصے میں پیش آیا۔اطلاعات کے مطابق انتخابی مہم کے دوران پارلیمانی امیدوا ر نذیفہ یوسف بیگ کا جلسہ جاری تھا کہ اچانک موٹر سائیکل سوار نے خود کو خواتین ہجوم کے درمیان پہنچ کر دھماکے سے اڑا لیا۔صوبے کے گورنر کے ترجمان محمد جاوید ہجری نے غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کو بتایا کہ خود کش حملے کے نتیجے میں 15 خواتین ہلاک جبکہ 35سے زائد افراد زخمی ہوئے۔صوبائی پولیس کے ترجمان خلیل اسر نے بتایا کہ اس دھماکے میں پارلیمانی امیدوار زخمی نہیں ہوئے تاہم اس میں 13 افراد جاں بحق اور 31 زخمی ہوئے۔انہوں نے غیر ملکی خبررساں ادارے سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ بم موٹر سائیکل میں نصب تھا اور موٹر سائیکل سوار نے خواتین کے ہجوم کے درمیان اسے اڑ ادیا۔واضح رہے کہ 20 اکتوبر کو ہونے والے انتخابات میں اب تک 20 پارلیمانی امیدوار مارے جا چکے ہیں۔خیال رہے کہ 3 اکتوبر کو افغان صوبے ننگرہار میں انتخابی مہم کے دوران دھماکے میں 14 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔قندھار سے تعلق رکھنے والے ایک پارلیمانی امیدوار ناصر مباریز کو 25 ستمبر کو فائرنگ کا نشانہ بنا کر ہلاک کردیا گیا تھا، قبلِ ازیں 2 ستمبر کو آئی ای ڈی دھماکے میں پارلیمانی امیدوار انور نیازی ہلاک ہوگئے تھے۔افغانستان کی 249 پارلیمانی نشستوں پر تقریبا ڈھائی ہزار امیدوار میدان میں ہیں جن کے انتخاب کے لیے افغان عوام 20 اکتوبر کو اپنا حقِ رائے دہی استعمال کریں گے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.