فضل الرحمن ،شہبازشریف ملاقات،حکومت کو ٹف ٹائم دینے کا فیصلہ

116

اسلام آباد(آن لائن)جمعیت علما اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے اپوزیشن لیڈر قومی اسمبلی شہبازشریف سے ملاقات کی، صدر مسلم لیگ(ن) نے مولانا فضل الرحمن کو اپوزیشن اتحاد کا کنوینر مقرر کر تے ہوئے متحدہ اپوزیشن کا اجلاس بلانے کی درخواست کردی ہے ۔ شہبازشریف نے فضل الرحمن کومشورہ دیا کہ ہم حکومت کو اسمبلی میں اور آپ باہر ٹف ٹائم دیں ، جلسے جلسوس اور دیگر ذرائع بھرپور طریقے سے استعمال کیے جائیں ، مولانا فضل الرحمن نے جواب دیا کہ آپ کے آرڈر کا انتظار ہے اس کے بعد بھرپور احتجاج کا پلان تیار کرلیا گیا ہے ۔ اسلام آباد میں ہونیوالی ملاقات میں شہباز شریف نے کہا کہ پبلک اکاؤنٹس کمیٹی عموما اپوزیشن کو دی جاتی ہے اس روایت کو توڑنا پالیمنٹ پر حملہ ہوگا اور جواب میں اپوزیشن جماعتیں اس میں نمائندگی سے انکار کردیں گی۔ شہباز شریف کا کہنا تھا کہ ملاقات میں دھاندلی پر پارلیمانی کمیٹی کی تحقیقات سے متعلق گفتگو ہوئی ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت کے غلط فیصلے پراپوزیشن مثبت تنقید کرے گی،رانا مشہود کے بیان پرانہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت گرانے والی کوئی بات نہیں ہے اور ہم پارلیمانی اصولوں پر قائم ہیں۔ مولانا فضل الرحمان کا دعوی تھا کہ میاں صاحب سے قوم رہنمائی چاہتی ہے ، نواز شریف سے ان کے گھر پر بات کی تھی جس میں میاں نواز شریف نے آئندہ کے لیے رہنمائی کرنے کی درخواست کی تھی۔اے این پی کے سربراہ اسفند یار ولی سے بات ہو گئی ہے،پیپلزپارٹی کی قیادت سے بات کروں گا ،عنقریب متحدہ اپوزیشن کا اجلاس بلائیں گے ،انہوں نے الزام عاید کیا کہ چرائے مینڈیٹ پر حکمران حکومت کررہے ہیں اور وہ خود کہتے ہیں کہ ہماری پشت پر فوج اور عدلیہ کھڑی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ