ہانگ کانگ کے خلاف پاکستان کو بڑی جیت کی امید

40

سید پرویز قیصر
متحدہ عرب امارات میں ایشیاکپ میں پاکستان اپنا پہلا میچ ہانگ کانگ کے خلاف آج دبئی بین الاقوامی کرکٹ اسٹیڈیم میں کھیلے گی۔ ہانگ کانگ نے ملائیشیا کے درالحکومت الالمپور میں ہوئے ایشیا کپ کے کوائلیفائی ٹورنامنٹ میں کامیابی کے بعد اس ٹورنامنٹ میں کھیلنے کا اعزاز حاصل کیا ہے۔اس نے فائنل میں متحدہ عرب امارات کو شکست دیکر یہ مقام حاصل کیا۔ اس ٹورنامنٹ میں اس نے نیپال کو بھی شکست دی تھی جس کو ایک روزہ بین الاقوامی میچ کھیلنے کا درجہ حاصل ہے۔
ہانگ کانگ تیسری مرتبہ ایشیا کپ میں کھیلنے کا موقع ملا ہے۔ اس نے اس سے پہلے2004 میں سری لنکا میں اور2008 میں پاکستان میں ہوئے ایشیاکپ ٹورنامنٹ میں شرکت کی تھی۔ اس نے ایشیا کپ میں جو4 میچ ابھی تک کھیلے ہیں۔ ان چاروں میں اسے شکست ہوئی ہے۔
پاکستان اورہانگ کانگ کے درمیان جو2 ایک روزہ بین لاقوامی میچ کھیلے گئے ہیں وہ دونوں ایشیا کپ میں ہوئے ہیں۔ پہلا مقابلہ18 جولائی2004 کو کولمبو میں ہواتھا جو پاکستان نے ٖڈکورٹھ اینڈ لوئیسْ قاعدے کے تحت 173 رنز سے جیتا تھا۔ اس میچ میں ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرتے ہوئے پاکستان نے مقررہ 50 اوور زمیں5وکٹ پر343 رنز بنائے تھے یہ ایشیا کپ میں سب سے بڑا اسکور تھا اب یہ ایشیا کپ میں چوتھا سب سے بڑا اسکور ہے۔ پاکستان کی جانب سے شعیب ملک نے 110 گیندوں پر153 منٹس میں10 چوکوں اور2 چھکوں کی مدد سے 118 رنز بنائے تھے جبکہ یونس خان 122 گیندوں پر165 منٹس میں8 چوکوں اور3 چھکوں کی مدد سے 144 رنز بنانے میں کامیاب ہوئے تھے۔ ان دونوں کھلاڑیوں نے تیسری وکٹ کی شراکت میں223 رن جوڑے جو ایشیا کپ میں اس وکٹ کی سب سے بڑی اور کل ملاکر دوسری سب سے بڑی شراکت ہے۔ سب سے بڑی شراکت کا ریکارڈ بھی پاکستانی جوڑی کے پاس ہے۔ محمد حفیظ اور ناصر جمشید پر مشتمل جوڑی نے پہلے وکٹ کی شراکت میں ہندوستان کے خلاف ڈھاکہ میں18 مارچ2012 کو224 رن جوڑے تھے۔ ہانگ کانگ کو 47 اوور میں 339 رن بنانے تھے مگر اس کے سبھی کھلاڑی 44.1 اوور میں165 رن بناکر آوٹ ہوگئے۔ شعیب ملک نے19 رن دیکر چار کھلاڑیوں کو آوٹ کیا تھا۔ انہیں میں آف دی میچ ایواڑ دیا گیا۔
پاکستان اور ہانگ کانگ کے درمیان دوسرا مقابلہ24 جون2008 کوکراچی میں ہوا تھا جس میں پاکستان155 رن سے فاتح رہی تھی۔ ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرتے ہوئے پاکستان نے مقررہ50 اوور میں نو وکٹ پر 288 رن بنائے تھے۔ یونس خان (67 رن) ، فواد عالم (63 رن) اورسہیل تنویر(59رن) کی نفف سنچریوں کی مدد سے پاکستان کا یہ اسکور ممکن ہوسکا۔ سہیل تنویر اور فواد عالم نے آٹھویں وکٹ کی شراکت میں100 رن جورے جو ایشیا کپ میں اس وکٹ کی سب سے بڑی شراکت ہے۔ ندیم احمد نے51 رن دیکر چار کھلاڑیوں کو آوٹ کیا۔ ہانگ کانگ کے سبھی کھلاڑی37.2 اوور میں133 رن بناکر آوٹ ہوئے۔ سہیل تنویر نے20 رن دیکر دو کھلاڑیوں کو آوٹ کیا اور آل راونڈ کارکردگی کے لئے میں آف دی میچ ایواڑ دیا گیا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ