جامعہ بنوریہ عالمیہ سائٹ میں ڈیم فنڈ مہم کے حوالے سے تقریب

65
مفتی نعیم ڈیم فنڈ ز مہم کے حوالے سے تقریب سے خطاب کررہے ہیں
مفتی نعیم ڈیم فنڈ ز مہم کے حوالے سے تقریب سے خطاب کررہے ہیں

کراچی( اسٹا ف رپورٹر ) ڈیم کی تعمیر کیلیے اہل مدارس وعلماء بھی میدان میں آگئے ۔بین الاقوامی دینی درسگاہ جامعہ بنوریہ عالمیہ سائٹ میں ڈیم فنڈ مہم کے حوالے سے تقریب کا انعقاد کیاگیا۔علما وطلبہ نے ڈیم فنڈ میں چندہ بھی جمع کرایا۔اس موقع پر تقریب سے جامعہ بنوریہ عالمیہ کے رئیس وشیخ الحدیث مفتی محمد نعیم نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ڈیموں کی تعمیر ناگزیر ہے ،ماہرین کے مطابق 2020ء سے 2022ء تک پاکستان میں پانی کا بحران شدید رخ اختیار کرجائے گا، سوچنے کا وقت نہیں ہنگامی بنیادوں پر ڈیموں پر کام کرنے کی ضرورت ہے ، چیف جسٹس ثاقب نثار نے ڈیموں کی تعمیر کی جانب توجہ مبذول کرائی موجودہ حکومت بھی ڈیم تعمیر کرنا چاہتی ہے ہمیں امید ہے قوم کے فنڈز ڈیم کی تعمیر میں ہی خرچ ہوں گے ،انہوں نے کہاکہ ماضی میں کسی حکمران نے ڈیم کی تعمیر کی طرف توجہ نہیں دی ،حکمرانوں کی غلط پالیسیوں اور لوٹ مار کی وجہ سے بیرونی قرضوں تلے ملک دب رہاہے۔انہوں نے کہا کہ ڈیم کی تعمیرضروری ہے،اس لیے ، قوم کے ہر فرد کا فرض بنتاہے وہ اپنی استطاعت کے مطابق ڈیم فنڈ میں رقم جمع کرائے ، انہوں نے کہاکہ ریاست کی مشکلات میں تعاون کرنا عوام وباشندوں کی ذمے داری ہے، مدینہ منورہ ہجرت کے بعد یہودیوں سے کنواں خریدنے کیلیے آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے صحابہؓ سے فنڈکی اپیل کی تھی اور اس کے عوض جنت کی بشارت دی جس کو حضرت عثمان غنی رضی اللہ تعالی ٰعنہ نے خرید کر مسلمانوں کیلیے وقف کردیاتھا۔ انہوں نے کہاکہ علماء وطلبہ ،اہل مدارس اور مذہبی طبقے نے ہر مشکل میں ملکی اداروں کا ساتھ دیا ہے ،اس لیے ضروری ہے جہاں اہل مدارس مساجدو مدارس کے لیے فنڈز کرتے ہیں وہی پرکچھ حصہ ڈیم کی تعمیر کیلیے بھی دیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ