دنیا بھر میں 8 کروڑ انسان جنگوں کے باعث بے گھر

64

نیو یارک (انٹرنیشنل ڈیسک) اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ دنیا بھر میں جنگوں اور مختلف تنازعات کے باعث اپنا گھر بار چھوڑ کر نقل مکانی کرنے والے افراد کی تعداد تقریباً 8 کروڑ ہو گئی ہے جو گزشتہ 70 برس کی تاریخ میں ایک ریکارڈ ہے۔ عالمی ادارہ برائے مہاجرین کی جانب سے بدھ کے روز جاری کی جانے والی سالانہ رپورٹ کے مطابق یہ تعداد 2018ء کے اختتام تک 7 کروڑ 80 لاکھ تھی۔ بے گھر افراد کی تعداد کا تعین محتاط اندازے کی بنیاد پر کیا گیا ہے اور غالب گمان ہے کہ اپنے گھر بار سے محروم ہونے والے افراد کی تعداد اس سے کہیں زیادہ ہے۔ عالمی ادارے کے مطابق اس نے اپنی رپورٹ میں ان 40 سے 50 لاکھ افراد کو شامل نہیں کیا جنہوں نے معاشی بحران کے باعث وینزویلا سے ہجرت کی ہے اور مختلف ملکوں میں پناہ گزین ہیں۔ ادارے کا کہنا ہے کہ ان افراد کو شامل نہ کرنے کی وجہ یہ ہے کہ ان میں سے بیشتر وینزویلا کے پڑوسی ملکوں ہی میں مقیم ہیں جہاں قیام کے لیے انہیں کسی قانونی دستاویز یا رجسٹریشن کی ضرورت نہیں پڑتی۔ گلوبل ٹرینڈزکے عنوان سے جاری کی جانے والی سالانہ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ جنگوں اور تنازعات سے متاثرہ تقریباً 3 کروڑ افراد کو اپنا گھر بار چھوڑ دوسرے ملکوں کو ہجرت کرنا پڑی ہے جب کہ 4 کروڑ سے زائد افراد اپنے ہی ملکوں میں پناہ گزین ہیں۔ تقریباً35 لاکھ افراد نے مختلف ملکوں میں سیاسی اور دیگر بنیادوں پر پناہ کی درخواستیں دائر کر رکھی ہیں۔ پناہ کی درخواستیں وصول کرنے والے ممالک میں سرِ فہرست امریکا ہے جہاں2018ء کے دوران 2 لاکھ 54 ہزار سے زیادہ لوگوں نے پناہ کی درخواست دی۔