عدالت عظمیٰ‘ڈیموں سے متعلق عدالتی فیصلے پر عمل درآمدکی سماعت کل ہوگی

25

اسلام آباد (اے پی پی) عدالت عظمیٰ نے دیامیر بھاشا اور مہمند ڈیمز سے متعلق عدالتی فیصلے پر عمل درآمد کیس کی سماعت کل تک ملتوی کرتے ہوئے آئندہ سماعت پرنیشنل بینک حکام کو طلب کرلیا ہے اور کہا کہ ڈیم فنڈ کی رقم جمع کرنے کے لیے اسٹیٹ بینک کے بجائے کسی دوسرے بینک سے بات کی جائے گی۔ جسٹس شیخ عظمت سعید کی سربراہی میں 3 رکنی بینچ نے کیس کی سماعت کی۔ ا س موقع پراسٹیٹ بینک کا نمائندہ عدالت میں پیش ہوا تو بینچ کے سربراہ نے ان کو مخاطب کر تے ہوئے کہا کہ اسٹیٹ بینک کے حالات دیکھ کر دعا کرتے ہیں کہ اللہ ہی خیر کرے، اسٹیٹ بینک حکام کو معلوم ہی نہیں ٹی بلز کا ریٹ کیا ہے، حالانکہ آج بجٹ پیش ہو رہا ہے لیکن اسٹیٹ بینک کا یہ حال ہے، جس پر افسوس ہی ہوتا ہے۔ دوران سماعت اسٹیٹ بینک کے نمائندے نے عدالت میںپیش ہوکر بتایا کہ ٹی بلز کا نیا ریٹ19 جون کو نکلے گا، تاہم اگر عدالت حکم دے توآج ہی نئے ریٹ پر سرمایہ کاری کر دیںگے، جس پر بینچ کے سربراہ نے کہا کہ عدالت نے جوا کھیلنا ہے نہ ہی کرکٹ میچ پر شرط لگانی ہے اور اس بات کا بھی کیا پتا کہ نیا ریٹ موجودہ ریٹ سے کم ہو، ڈیم فنڈ کی سرمایہ کاری ایک حساس معاملہ ہے، کوئی یقین سے کیسے کہہ سکتا ہے کہ ٹی بلز کا نیا ریٹ آج سے بہتر ہوگا کیونکہ یہ تو ایسی ہی گارنٹی ہے کہ پاکستان آسٹریلیا سے اگلا میچ جیت جائے گا۔ دوران سماعت فاضل جج نے اسٹیٹ بینک کے نمائندے پر برہمی کااظہارکرتے ہوئے کہاکہ آپ کے بعد ہمیں حکومت پر بھی اعتماد نہیں، آپ کیا سمجھ رہے ہیں ، ہم آپ کے پاس پیسے نہیں رکھتے بلکہ اس معاملے پرکسی اور بینک سے بات کریں گے کیونکہ آپ سے سوال کچھ پوچھاجاتاہے جس کاجواب کچھ اوردیا جاتاہے، میرا خیال ہے ہمیں کسی نجی بینک سے رابطہ کرنا چاہیے۔بعدازاں عدالت نے نیشنل بینک کے حکام کو آئندہ سماعت پر طلب کرتے ہوئے سماعت ملتوی کردی۔