امام الحق نے سب سے کم اننگز میں6 سنچریاں بناکر عالمی ریکار ڈاپنے نام کرلیا

49

سید پرویز قیصر
امام الحق ایک روزہ بین الاقوامی کرکٹ میں سب سے کم اننگز میں6 سنچریاں بنانے کا عالمی ریکارڈ اپنے نام کرنے میں کامیاب ہوگئے ۔ انہوں نے انگلینڈ کے خلاف برسٹل میں کھیلے گئے تیسرے ایک روزہ بین الاقوامی میچ میں211 منٹ میں131 گیندوں پر16 چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے151 رنز بناکر یہ اعزاز حاصل کیا۔
بائیں ہاتھ سے بلے بازی کرنے والے امام الحق نے چھٹی سنچری27 ویں ایک روزہ بین الاقوامی میچ میں اسکور کی۔ اس میچ کے اختتام تک انہوں نے60.04 کی اوسط اور82.20 کے اسڑائیک ریٹ کے ساتھ6 سنچریاںاور5نصف سنچریوں کی مدد سے1381 رنز بنائے تھے۔
اس سے پہلے ایک روزہ بین الاقوامی کرکٹ میں سب سے کم اننگز میں6 سنچریاں بنانے کا ریکارڈ سری لنکا کے اپل تھرنگا کے پاس تھا جنہوں نے31 میچ کی29 ویں اننگ میں ایسا کیا تھا۔ اس میچ کے اختتام تک انہوں نے 40.03 کی اوسط اور77.34 کے اسڑائیک ریٹ کے ساتھ6 سنچریاں اور3نصف سنچریوں کی مدد سے1161 رنز بنائے تھے۔
پاکستان کے بابر اعظم نے6 سنچریاں بنانے میں32 میچوں کی 32 اننگز میں بلے بازی کی تھی۔ اس میچ کے اختتام تک وہ 55.64 کی اوسط اور 87.82 کے اسڑائیک ریٹ کے ساتھ 6 سنچریاں اوراتنی ہی نصف سنچریوں کی مدد سے1558 رنز بنانے میں کامیاب رہے تھے۔
سب سے کم اننگز میں 6 سنچریاں بنانے والوں میں چوتھا نمبر جنوبی افریقا کے ہاشم آملہ کے پاس ہے۔ انہوں نے 35میچوں کی 34 اننگز میں بلے بازی کرنے کے بعد ایسا کیا تھا۔ اس میچ کے اختتام تک وہ 61.13 کی اوسط اور 92.53 کے اسڑائیک ریٹ کے ساتھ6 سنچریاں اور9نصف سنچریوں کی مدد سے1834 رنز بنانے میں کامیاب رہے تھے۔
امام الحق کا اس سے پہلے ایک روزہ بین الاقوامی کرکٹ میں سب سے زیادہ اسکور128 رنز تھا جو انہوں نے زمبابوے کے خلاف 13 جولائی 2018 کو بلاوایو میں188 منٹ میں134 گیندوں پر 11چوکوں کی مدد سے بنایا تھا۔ اس میچ میں پاکستان کو201 رنز سے فتح حاصل ہوئی تھی جبکہ انگلینڈ کے خلاف اسے 6 وکٹ سے شکست ہوئی۔
سری لنکا کے خلاف ابو ظبی میں 18 اکتوبر2017 کو پہلا ایک روزہ بین الاقوامی میچ کھیلنے والے امام الحق نے پہلی سنچری اسی میچ میں بنائی تھی۔ وہ125 گیندوں پر5 چوکوں اور2 چھکوں کی مدد سے100 رنz بنائے تھے۔5ویں میچ کی5ویںاننگ وہ دوسری اور8ویں میچ کی8ویں اننگ میں تیسری سنچری بنائی تھی۔
9ویں میچ کی 9ویںاننگ میں امام الحق نے چوتھی سنچری اسکور کی تھی جبکہ19ویں میچ کی 19ویں اننگ میں وہ اپنی 5ویں سنچری بنانے میں کامیاب رہے تھے۔6 سنچریوںمیں سے 4 میں پاکستان کو فتح حاصل ہوئی او2 میں شکست کا سامنا کرنا پڑا۔