بھارتی پائلٹ نے بھارت پہنچتے ہی بیان بدل دیا

389

نئی دہلی: بھارتی پائلٹ ابھی نندن نے بھارت پہنچتے ہی اپنا بیان بدل دیا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق بھارتی ونگ کمانڈر ابھی نندن نے پاکستان سے رہائی کے بعد بھارت پہنچتے ہی بھارتی فضائیہ کے سربراہان سے ملاقات کی۔ابھی نندن نے پاکستان پر جھوٹے الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ اسے پاکستان کے حساس اداروں نے اپنی تحویل میں رکھا تھا جہاں اسے دوران حراست ذہنی تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔

ابھی نندن کا کہنا تھا کہ پاکستان میں مجھ سے معلومات حاصل کرنے کے لیے ذہنی ٹارچر کا نشانہ بنایا گیا اور بھارتی حکام کے حوالے کرنے میں تاخیر بھی اسی دبا ئوکا نتیجہ تھی۔ بھارتی پائلٹ نے کہا کہ مجھ پر دبائو ڈال کر ویڈیو بنوائی گئی تھی جس میں پاکستان کے بارے میں اچھی باتیں کروائی گئیں۔

واضح رہے کہ پلوامہ واقعہ کے بعد پاک بھارت کشیدگی کے دوران پاکستان نے سرحدی حدود کی خلاف ورزی کرنے پر بھارتی کے دو جیٹ طیارے مار گرائے تھے۔پاکستان نے اپنی جوابی کارروائی میں ابھی نندن کو زندہ گرفتار کرلیا تھا جسے دو روز قبل واہگہ بارڈر پر بھارتی حکام کے حوالے کر دیا گیا تھا۔ابھی نندن نے پاکستان میں قید کے دوران کہا تھا کہ وہ پاکستان سے بہت متاثر ہوئے ہیں جب کہ بھارتی میڈیا پاکستان کے خلاف جھوٹا پروپیگنڈا کر کے بھارتی عوام کو گمراہ کرتا ہے۔ابھی نندن نے پاکستان میں اپنے ویڈیو بیان کے دوران کہا تھا کہ پاکستانی فوج نے ان کی ساتھ بہت اچھا سلوک کیا ہے اور پاکستانی فوج ایک پروفیشنل فوج ہے۔

یاد رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے جذبی خیر سگالی کے تحت بھارتی پائلٹ کی واپسی کا اعلان کیا تھا۔