وزیر اعظم نے کلین اینڈ گرین مہم کا آغاز کردیا

123

وزیر اعظم عمران خان نے اسلام آباد کے مقامی کالج میں پودا لگا کر کلین اینڈ گرین مہم کا آغاز کردیا۔

وزیراعظم عمران خان گرین اینڈ کلین مہم کا آغاز کرنے اسلام آباد کے مقامی کالج پہنچے جہاں انہوں نے پودا لگاکر مہم کا باقاعدہ آغاز کیا۔ وزیراعـظم نے صاف صفائی مہم میں بھی حصہ لیا اور علامتی طور پر جھاڑو لگاکر مہم کا آغاز کیا جب کہ طالبات کے ساتھ کالج گراونڈ سے کچرا اٹھایا۔

اس موقع پر سکول کے طلباء سے گفتگو کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ گلوبل وارمنگ سے متاثر ہونے والے ممالک میں پاکستان 7 ویں نمبر پر ہے۔ جیسے جیسے موسم گرم ہوگا بارشیں کم ہو گئیں جس سے ملک میں شدید خشک سالی کا خطرہ ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان ایک زرعی ملک ہے جو دریاؤں سے پانی پر انحصار کرتا ہے،درخت آکسیجن پیدا کرتے ہیں اور کارکن ڈائی آکسائیڈ کو فضاء سے کم کرتے ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ بین الاقوامی ممالک صاف ہیں اور ہم دن بدن ملک گندا کر رہے ہیں۔ لاہور میں سردیوں میں آلودگی دنیا میں سب سے زیادہ ہو جاتی ہے جس سے بچوں کا مستقبل تباہ ہو رہہا ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ آلودگی سے زندگی کے 11 سال کم ہو جاتے ہیں۔ گرین اینڈ کلین مہم اس مسئلے کے حل کیلئے شروع کی ہے۔ پاکستان 7 ویں نمبر پر گلوبل وارمنگ سے سب سے زیادہ متاثر ہو رہا ہے۔ پختونخواہ میں ایک ارب درخت اگائے اب سارے پاکستان میں 5 سال میں 10 ارب درخت اگائیں گے جس سے سارا موسم تبدیل ہو سکتا ہے،ہمیں صفائی کو بڑھانا ہو گا۔

وزیراعظم نے کہا کہ کچی آبادیاں بہت گندی ہیں ان علاقوں کو بھی صاف کرنا ہے۔ کچی آبادیوں کو گھر بنا کر دیں گے اور سیوریج کا نظام بھی بہتر کریں گے۔ 5 سال بعد وہ پاکستان بنے گا کہ یورپ سے زیادہ پاکستان صاف بنے گا۔ طلباء اب پھر اس مہم کی سربراہی کریں اور عزم کریں کہ ہم نے صفائی کرنی ہے ملک کی۔ سنگاپور کا دریا گندا تھا جس کو 10 سال میں اتنا صاف کیا گیا کہ اب اس میں مچھلیاں ہیں۔ ہم کلین اینڈ گرین پاکستان کی بنیاد رکھ رہے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.