سکھر میں گھر کی دیوار گرنے سے 9 بچے جاں بحق،2 زخمی

80

سکھر/ کراچی (نمائندہ جسارت+ اسٹاف رپورٹر) ضلع سکھر کے تعلقہ صالح پٹ میں ایک گھر کی دیوار گرنے سے 9 بچے ملبے میں دب کر جاں بحق جبکہ 2 زخمی ہو گئے۔ پولیس سے موصولہ تفصیلات کے مطابق صالح پٹ کے ریگستانی علاقے آر ڈی 159 میں واقع گوٹھ غلام سرور شنبانی میں سموں شنبانی کے گھر میں بچے کھیل رہے تھے کہ اچانک گھرکی دیوار آگری جس کے نتیجے میں 9 بچے ملبے میں دب کر جاں بحق ہوگئے، واقعے کے بعد علاقہ مکینوں نے پہنچ کر بچوں کی نعشوں کو ملبے تلے نکالا ،جبکہ 2 زخمی بچوں کو اسپتال منتقل کیاگیا ہے، جاں بحق ہونے والے بچوں کے والدین زمینوں اور شہروں میں روزگار اور معمول
کے کام کاج کے لیے گھر وں سے باہر تھے، جاں بحق ہونے والے بچوں کی شناخت رخسانہ، یعقوب، زلفت، گڈی ، رخسانہ بنت بلاول، غلام اکبر ، منظوراں ، ستاراں کے طور پر ہوئی ہے، ہلاک ہونیوالے بچوں میں بھائی بہنیں اور 2 سگی بہنیں بھی شامل ہیں، جن کی عمریں 4 سے 12برس کے درمیان ہیں۔ڈپٹی کمشنر سکھر غلام مرتضیٰ شیخ ، مختار کار سمیت دیگر انتظامی افسران واقعے کے بعد گوٹھ پہنچ گئے ۔علاوہ ازیں وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے دیوار گرنے سے بچوں کی ہلاکت کا نوٹس لیتے ہوئے ڈپٹی کمشنر سکھرسے واقعے کی رپورٹ طلب کرلی ہے اور انہیں ہدایت کی کہ زخمی بچوں کے علاج میں کوتاہی نہ برتی جائے۔ انہوں نے لواحقین اور سوگواران سے اظہار تعزیت اورجاں بحق ہونے والے بچوں کے لیے دعا مغفرت بھی کی،ان کا کہنا تھا کہ واقعہ افسوسناک اور دل دکھانے والا ہے ۔انہوں نے ڈپٹی کمشنر سکھر کو بچوں کی تدفین سے متعلق ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ فوری طور پر4 ایمبولینس فراہم کی جائیں اور متاثرہ اہل خانہ کی بھرپور مدد کی جائے۔ ادھر ڈی سی سکھر نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے زخمی بچوں کی عیادت کی اور ڈاکٹر ز کو ہدایت کی کہ انہیں بہتر طور پر علاج کی سہولیات فراہم کی جائیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ