فارما ایشیا میں 25 کروڑ ڈالر کے سودے ، 60 ہزار افراد نے شرکت کی

112

کراچی ( اسٹاف رپورٹر) تین روزہ بین الاقوامی ہیلتھ ایشیاء اور فارما ایشیا میں مجموعی طور پر 25 کروڑڈالر کے باہمی معاہدے طے پائے۔ چین، ایران، امریکا، بھارت، ترکی سمیت 25 ممالک کے 550 وفود نے شرکت کی۔ پاکستان چائنا جوائنٹ چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری اور ای کامرس گیٹ وے کے اشتراک سے منعقد کی جانے والی 15 ویں تین روزہ بین الاقوامی ہیلتھ اور فارما ایشاء نمائش میں طب کے شعبے سے تعلق رکھنے والے 60 ہزار سے زائد افراد نے شرکت کی، ای کامرس گیٹ وے کے صدر ڈاکٹر خورشید نظام نے بتایا کہ گزشتہ سال کے مقابلے میں ملک بھر سے طبی شعبے کے افراد رواں سال زیادہ تھے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کی جانب سے صحت پر خصوصی توجہ کی پالیسی سے بیرونی دنیا کو مثبت پیغام ملا ہے۔ ڈاکٹر خورشید نظام نے کہا کہ اس سال غیر ملکی وفود کی تعداد بھی 30 فیصد زیادہ تھی اور آخری لمحات میں بھی غیر ملکی وفود کمپنیوں نے رجسٹریشن کروائی۔ پاکستان فارما سیوٹیکل ایسوسی ایشن کے چیئرمین شاہ زیب اکرم نے صحافیوں سے گفتگو کے دوران کہا کہ ادویات کی مقامی کمپنیاں ملک کو 3 ارب ڈالر سے دگنا حصہ دے سکتی ہیں اگر اس صنعت کی کاروباری لاگت اور بنیادی مسائل حل کرنے سے فارما شعبہ دیگر صنعتوں سے زیادہ روزگار اور ملکی محصولات میں اضافے کا ذریعہ بن سکتا ہے۔ تین روزہ بین الاقوامی ہیلتھ ایشیاء اور فارما ایشیا نمائش میں کاٹی کے سابق صدر زاہد سعید، پی پی ایم اے کے سابق چیئر مین ڈاکٹر قیصر وحید نے شرکت کی۔ پندھرویں ہیلتھ ایشیاء اور فارما ایشیاء کے دوران 30 سے زائد سیمینارز میں ڈاکٹر فرخ ناہید، پروفیسر تزین فاطمہ اور ڈاکٹر سعدیہ احسن سمیت کئی ماہرین نے انسانی صحت پر ہونے والی جدید تحقیق اور پاکستان میں ان پر عملدرآمد کے علاوہ انسانی جسم میں خون کی حفاظتی منتقلی، انیستھیزیا، دماغی صحت، جلدی امراض، ریڈیالوجی، جدید ڈائلاسسزکے مراکز کے قیام اور اداویات پر دنیا میں ہونے والی نئی پیش رفت پر مقالے پیش کیے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ