انتخابات2018ء مکمل طور پر انجینئرڈ تھے‘جلال محمود شاہ

29

کراچی(اسٹاف رپورٹر) سندھ یونائیٹڈپارٹی کے سر براہ سید جلال محمود شاہ نے کہا ہے کہ عام انتخابات کے نتائج کے بعد یہ ثابت ہو چکا ہے کہ کچھ قوتیں ہم کو جمہوری عمل میں دیکھنا نہیں چاہتیں۔ اگر یہ روش رکھی گئی تو وہ دن دور نہیں کہ سندھ کے عوام کا جمہوری عمل سے اعتبار مکمل طور پر اٹھ جائے اور مجبوراََ ہمیں وہ راستہ اختیار کرنا پڑے جو سندھ کے اکثریتی عوام کی خواہش ہے۔ انتخابات2018ء مکمل طور پر انجیئرڈ تھے۔ وفاقی حکومت کی حکمرانی کے لیے ایک پارٹی کو فائدہ دینے کی خاطر سندھ کے مینڈیٹ کو قربان کر کے پیپلز پارٹی کو پلیٹ میں رکھ کے پیش کیا گیا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اتوار کوکراچی پریس کلب میں سندھ کے سیاسی رہنما مرحوم علی حسن چانڈیو کی پانچویں برسی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔برسی تقریب میں عوامی جمہوری پارٹی، نیشنل پارٹی، جیئے سندھ قومی محاذ اور دیگر پارٹیوں کے رہنما?ں، ادیبوں اور دانشوروں نے خطاب کر کے علی حسن چانڈیو کو خراج تحسین پیش کیا۔ سید جلال محمود شاہ نے کہا کہ انتخابات2018ء مکمل طور پر انجیئرڈ تھے۔ انتخابات میں ہار جیت ہوتی ہے مایوس ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔کارکن آج سے ہی بلدیاتی انتخابات کی تیاریاں کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.