پی ایس 120میں پانی چوروں کیخلاف کارروائی کروں گا‘ عبد الرزاق

46

کراچی( انٹر ویو /محمد علی فاروق)متحدہ مجلس عمل کے نامزد امیدوار برائے صوبائی اسمبلی حلقہ 120 عبدالرزاق خان 13جون 1972ء کوکراچی میں پیدا ہوئے 1993ء میں ایس ایم سائنس کالج میں اسلامی جمعیت طلبہ سے وابستہ ہوئے ، جامعہ کراچی سے ایم اے ماس کمیونی کیشن کیا ہے ، 2001ء اور 2005ء میں2 مرتبہ میٹروول سے ناظم
منتخب ہوئے ، انہوں نے میٹروول میں کراچی کاپہلا ماڈ ل پارک بنا یا ، جماعت اسلامی کے پلیٹ فارم سے 2013ء کے انتخابات میں پی ایس 93کی نشست پربڑی تعدا د میں ووٹ حاصل کیے ، ان کو چند سو ووٹوں سے شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا ،بعد ازاں الیکشن ٹریبونل سے ان کے حق میں فیصلہ بھی آیا لیکن عدالت عظمیٰ نے سید حفیظ الدین کے حق میں فیصلہ سنایا لیکن الیکشن کمیشن نے اس بات کا نوٹس نہیں لیا ۔ عبدالرزاق خا ن کی کارکردگی کو دیکھتے ہوئے جماعت اسلامی کے نظم نے انہیں امیر ضلع غربی کی ذمے داری سونپ دی ، عبدالرزاق خان نے جسارت سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ انہوں نے اپنی نظامت کے دور میں سائٹ میٹروول میں گرلز ڈگری کالج ، بوائز ڈگری کالج ، ایلیمنٹری کالج اور 5پرائمری اسکول تعمیر کرائے ،انہوں نے کہا کہ دوسری جماعتوں کا منشورلادینی ہے جبکہ متحدہ مجلس عمل کا منشور خالص اسلامی منشور ہے ، ووٹ کی بنیاد ایمانداری ،کردار اور خدمت پر رکھی گئی ہے ، اسلامی شعار اس کا اہم رکن ہے، دینی جماعتوں کے اتحاد نے اسلامی ووٹ کو قوت بخشی ہے ، دینی قوتیں اسلام کے لیے مخلص ہوں تو لادینی قوتوں کاآسانی سے مقابلہ کیا جاسکتا ہے ، اگر امت انتشار کا شکار رہی تو لادینی قوتوں کے مقابلے کے قابل نہیں رہیں گے اور امت مسلمہ کا شیرازہ بکھر جائے گا ، ایک سوال کے جواب میں عبدالرزاق خان نے کہا کہ 2002ء میں متحدہ مجلس عمل کو جو نشستیں ملیں اس کی وجہ افغانستان پر امریکی حملہ ، بین الاقوامی حالات ، طالبان حکومت کے خاتمے کی صورت میں امت مسلمہ میں غم غصہ تھا جس کے نتیجے میں متحدہ مجلس عمل نے الیکشن میں بھر پور کامیابی حاصل کی تھی جبکہ اس مرتبہ حالا ت اس طرح کے نہیں ہیں ۔ عبدالرزاق نے کہا کہ میرے حلقہ انتخاب پی ایس 120میں رجسٹرڈ ووٹرز ایک لاکھ 76ہزار 48ہیں ،جس میں مرد ووٹرز ایک لاکھ 7ہزار 636اور خواتین ووٹرز 68ہزار 212ہیں۔پٹھان کالونی ، بنارس ، قصبہ کالونی ، فرنٹیئر کالونی ، پیر آباد ، مجاہد آباد شامل ہیں ، پانی کراچی کا ایک اہم اور حساس مسئلہ بن چکا ہے ، یہ بحرانی کیفیت کی ذمے دار موجودہ اور سابق حکومتیں ہیں متحدہ مجلس عمل کے پلیٹ فارم سے ہمیں موقع ملا تو سب سے پہلے پانی کے مسئلے کو حل کیا جائے گا اور غیر قانونی کنکشن کو ختم کر کے علاقے میں منصفانہ تقسیم آب کا نظام بنا یا جائے گا جبکہ بحریہ ٹاؤن میں دیے گئے کے4 کے منصوبے کے تحت پانی کو اور غیر قانونی ہائیڈ رینٹس کو ختم کر کے کراچی کو پانی سپلائی کیا جائے گا ، صنعتی ایریا میں پانی کا کاروبار چل رہا ہے یہ عوام کے پینے کا پانی ہے جو چوری کر کے صنعتی ایریا میں سپلائی کیا جارہا ہے ، پانی کا کاروبار سرکاری سر پرستی میں بڑے منظم انداز میں مافیا اور گینگ چلا رہے ہیں ان کا خاتمہ وقت کی اہم ضرورت ہے سب سے پہلے ان مافیا اور گینگ کا خاتمہ کیا جائے گا ۔عبدالرزاق خان نے کہا کہ ایم کیو ایم کے انتشار کے باعث اگر متحدہ مجلس عمل کراچی شہر میں ایک پر اثر مہم لانچ کرنے میں کامیاب ہوگئی اور عوام کی محرومیوں کا حل اور علاج ممکن ہوااور مجلس عمل شہرکے ہر دروازے پر پہنچے تو یقینی طور پر اس کا فائدہ ایم ایم اے کو پہنچے گا ، اگر مجلس عمل باتوں ،دعوؤں اور نعروں کی حد تک محدود رہی تو ایم کیو ایم کی ٹوٹ پھوٹ کا فائدہ دوسری جماعتیں اٹھائیں گی ، انہوں نے کہا کہ پی ایس 120کا سب سے بڑا مسئلہ پانی ہے، متحدہ مجلس عمل کے پلیٹ فارم سے منتخب ہوا تو واٹر بورڈ سے مل کر ایک ایسا لائحہ عمل ترتیب دیا جائے گا جس میں پانی کی منصفانہ تقسیم کے منصوبے بنا ئے جائیں گے ۔ عبدالرزاق نے کہا کہ انتخابات کے عمل کو شفاف بنانے کے لیے الیکشن کمیشن عملی طور پر اپنے بنائے ہوئے قوانین پر عملدرآمد کرائے پریزائیڈنگ آفسیر اور آراوزپر کڑی نگاہ رکھی جائے اور غلطی یا غفلت کی صورت میں فوری سزا دی جائے اور ایسے افراد کو نشان عبرت بنا دیا جائے ،پولنگ اسٹیشن کے باہر اور اندر پاک آرمی کو تعینا ت کیا جائے ۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ