ویاگرا کی خریداری ، جنوبی کورین صدر کو ایک اور اسکینڈل کا سامنا

122

جنوبی کوریا کی 64سالہ غیر شادی شدہ خاتون صدر کو ان کے دفتر کی طرف سے بڑی مقدار میں ویاگرا کی خریداری کے نئے سکینڈل کاسامنا ہے۔ گزشتہ روز اپوزیشن سے تعلق رکھنے والے ایک رکن پارلیمنٹ نے انکشاف کیاکہ صدر کے دفتری عملہ کی طرف سے گزشتہ سال ویاگرا اور اس سے ملتی جلتی گولیاں سینکڑوں کی تعداد میں منگوائی گئی ہیں ۔

صدر پاک گیون بائی کے ترجمان کی طرف سے وضاحت کی گئی ہے کہ یہ گولیاں گزشتےہ سال مئی میں صدر کے ایتھوپیا سمیت بعض افریقی ممالک کے دورے کے موقع پر منگوائی گئیں اور ان کامقصد صدر کے دورے کے ارکان کو ماﺅنٹین سک نیس سے بچاناتھا۔ ترجمان نے کہاکہ یہ دوا بلندی پر واقع پہاڑی علاقوں میں سفر کے دوران طبعیت خراب ہونے پر ہی مو ¿ثر ہے ۔جنوبی کوریا کی صدر کے دفترکی طرف سے بڑھاپے کی رفتار سست کرنے والی اور اور طاقت کی ادویات بھی بڑی مقدار میں خریدنے کا انکشاف ہواہے۔

جنوبی کوریا کے ذرائع ابلاغ کی رپورٹ کے مطابق جنوبی کوریا کی صدر خود بھی اپنے سرکاری ڈاکٹرز کے علم میں لائے بغیر ان ادویات کااستعمال کرتی رہی ہیں۔ ان پر اپنے ایک دوست چوٹی سون سیل کے ساتھ مل کر ادویات کی کمپنیوں سے بھاری عطیات بٹورنے کا بھی الزام ہے۔ واضح رہے کہ صدر کے خلاف حال ہی میں اجتماعی مظاہروں میں ہزاروں افراد نے شرکت کی ہے اور پارلیمنٹ میں ان کے مواخذے کا مطالبہ زور پکڑ رہاہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ