عمران خان کا طرز حکمرانی ملک کو حادثے سے دوچار کرسکتا ہے،لیاقت بلوچ

115

لاہور(نمائندہ جسارت)نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان اور سابق پارلیمانی لیڈر لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ عمران خان کسی انجانے خوف میں مبتلا ہیں ۔ حکومت معاشی اور معاشرتی بحرانوں پر قابو پانے میں ناکام ہے ۔ عمران خان کا جارحانہ اسلوب ملک کو کسی حادثے کا شکار کردے گا ۔ مہنگائی ، بے روزگاری اور لاقانونیت سے عوام نجات چاہتے ہیں۔ جماعت اسلامی ملک بھر میں پرامن عوامی مارچ جاری رکھے گی ۔ 23 جون کو فیصل آباد میں زبردست عوامی مارچ ہوگا ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے منصورہ میں مرکزی تربیت گاہ سے خطاب اور علما کے وفد سے گفتگوکرتے ہوئے کیا۔ لیاقت بلوچ نے کہاکہ مصر کے منتخب صدر ڈاکٹر محمد مرسی کی عدالت میں آمر کے آہنی پنجرے میں موت المناک اور مہذب و جمہوری دنیا کے لیے تازیانہ ہے ۔ ڈاکٹر محمد مرسی کا قاتل آمر فو جی جنرل سیسی ہے ۔ عرب بہار اور مصر میں اسلام کی علمبرداراخوان المسلمون کی کامیابی عالمی استعماری قوتوں کے لیے خطرہ بن گئی۔ اگر دنیا میں سیکولر جمہوریت و مغربی تہذیب کی جمہوریت قبول ہے تو اسلام کے ماننے والوں کے لیے قرآن و سنت کی پابندی پارلیمانی جمہوریت کیوں ناپسند ہے ۔ دنیا اس حقیقت کو تسلیم کرے کہ اسلام کے حامی جمہوری ، سیاسی حق رکھتے ہیں وگرنہ یہ تضاد اور دہرا معیار انتہا پسندی اور شدت پسندی کو فروغ دے گا ۔ لیاقت بلوچ نے کہاکہ پوری دنیا کے مسلمان سعودی عرب خصوصاً حرمین شریفین سے محبت اور عقیدت رکھتے ہیں ۔ ملت اسلامیہ کی محبت ہی سعودی عرب کی طاقت ہے ۔ عالم اسلام کے لیے امریکا ، یورپ ، یہود ہنود کسی صورت دوست اور مفید نہیں ہوسکتے ۔اتحاد امت ہی عالم اسلام کے بحرانوں کا علاج ہے ۔ فرقہ واریت امت کے لیے فتنہ اور زہر قاتل ہے ۔درد مشترک اور قدر مشترک ہی اتحاد کا چارٹر ہے ۔