اسلام آباد ہائیکورٹ‘پشتون تحفظ موومنٹ کیس میں تفتیشی افسرکی عدم پیشی پر برہم

37

اسلام آباد( آن لائن ) اسلام آباد ہائیکورٹ نے پشتون تحفظ موومنٹ کے کارکن کی درخواست ضمانت کیس میں ایف آئی اے کے تفتیشی افسر کی عدم پیشی پر برہمی کا اظہار کیا۔ عدالت نے حکم دیا کہ آئندہ سماعت پر ہر صورت فرانزک رپورٹ پیش کی جائے۔ جسٹس عامر فاروق پر مشتمل سنگل رکنی بینچ نے درخواست پر سماعت کی۔دوران سماعت درخواست گزار عبدالرحیم وزیر پیش ہوئے۔عدالت نے استفسار کیا کہ ایف آئی اے کے تفتیشی افسر نے کہا کہ عدالت کو بتایا گیا کہ وہ مصروفیات کی وجہ سے پیش نہیں ہوسکتے ۔بعد ازاں عدالت نے عدم پیشی پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے حکم دیا کہ آئندہ سماعت پر ہر حال میں موبائل
فرانزک رپورٹ پیش کی جائے جس کے بعد کیس کی سماعت آئندہ سماعت 17ستمبر تک ملتوی کردی گئی۔ واضح رہے کہ ایف آئی اے الیکٹرونک کرائمر سرکل کی جانب سے پشتون تحفظ موومنٹ کے خلاف مقدمہ درج کرکے حیات خان نامی ملزم کو گرفتار کیا۔ گزشتہ سماعت پر ایف آئی اے کے تفتیشی افسر میں انسپکٹر خورشید نے عدالت کو بتایا کہ ملزم نے اعتراف جرم کرلیا ہے ،ملزم کی الیکٹرونک مشین ایف آئی اے کے قبضے میں ہے، ملزم سے مزید تفتیش جاری ہے جبکہ درخواست گزار کے وکیل نے عدالت میں موقف اختیار کیا تھا کہ حیات خان مقدمے میں نامزد ملزم نہیں ہے ،لہٰذا درخواست ضمانت منظور کی جائے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ