تجارت اور کسٹمز کے طریقہ کار کی آسانی کے لیے یو ایس ایڈ اور پاکستان کی مشترکہ کانفرنس

55
یوایس ایڈ اور حکومت پاکستان کے فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے اشتراک سے کانفرنس میں شرکاء کا گروپ
یوایس ایڈ اور حکومت پاکستان کے فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے اشتراک سے کانفرنس میں شرکاء کا گروپ

اسلا م آباد (کامرس ڈیسک) امریکی ادارہ برائے بین الاقوامی ترقی (یوایس ایڈ) اور حکومت پاکستان کے فیڈرل بورڈ آف ریونیو کے اشتراک سے تجارت کو آسان بنانے کے منصوبے کے تحت نیشنل سنگل وِنڈو (این ایس ڈبلیو ) فار ٹریڈکے قیام کے لیے دو روزہ کانفرنس منعقد ہوئی۔ این ایس ڈبلیو کے قیام سے تجارت اور اشیاء کی نقل و حمل میں شامل فریقین کو درآمدات، برآمدات اور راہداری سے متعلق معلومات اور دستاویزات کو یکساں بنانے اور ساری کاغذی کا رروائیوں کو ایک ہی جگہ پر پورا کرنے کی سہولت میسر ہو گی۔تجارتی قوانین نافذ کرنے والے اہم اداروں کے ایک سو سے زیادہ سرکاری حکام پاکستان کی تجارت میں نیشنل سنگل وِنڈو کے قیام کے حوالے سے حائل دشواریوں کو بہتر طور پر سمجھنے کے لیے اس کانفرنس میں شریک ہیں۔ وزیر مملکت برائے خزانہ رانا محمد افضل خان نے کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ نیشنل سنگل وِنڈو کا اقدام سرکاری تجارتی شعبہ میں اصلاحات کے لیے کی جانے والی کوششوں میں اہم ترین شروعات میں سے ایک ہے۔ کاروبار سے وابستہ خودکار اور کاغذی لوازمات سے آزاد طورطریقے شامل ہو نے کی وجہ سے اس نظام میں تجارت کوتبدیل کرنے اور جدید بنانے کی صلاحیت پائی جاتی ہے اوراس کے نفاذ سے پاکستان میں تجارت کرنے کا وقت اور لاگت کم ہوجائے گی۔ اس کے ساتھ ساتھ اس پیش رفت سے ملک میں تجارت کو باقاعدہ بنانے والے سرکاری اداروں کی کارکردگی اور افادیت پر بھی مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔ دنیا بھر میں افسر شاہی کے طریقہ ہائے کار کاروباری طبقے پر بوجھ ڈال کر برآمدات کی حوصلہ شکنی کا باعث بنتے ہیں۔ نیشنل سنگل وِنڈو کے ذریعہ کاروباری اداروں کو اپنی عملی صلاحیت بڑھانے کا موقع ملے گا اور غیر ضروری سرکاری رکاوٹیں کم ہونے سے سرحد پار کاروبار میں تیزی آئے گی۔ یو ایس ایڈ کی قائم مقام مشن ڈائریکٹر ہیلن پٹاکی نے کانفرنس میں اظہارِ خیال کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے موجودہ تجارتی خسارے پر قابو پانے کے لیے پاکستان کی برآمدات میں اضافہ اور مقامی صنعتوں کی کاروباری مسابقت کو بڑھانا انتہائی ضروری ہے۔
نیشنل سنگل وِنڈوکا قیام کاروبار کرنے کے مراحل کو آسان بنا کر پاکستان کی معیشت کے دریچے وا کردے گا۔ پاکستان میں نیشنل سنگل وِنڈو نظا م مرحلہ وار چار سال میں مکمل ہو گا۔ نیشنل سنگل وِنڈو نجی شعبے میں سرمایہ کاری ، متحرک زرعی شعبے کے فروغ ، مستحکم تجارت کے لیے سازگار فضا اور کاروباری مواقع میں وسعت کے ذریعہ پاکستان کی معاشی ترقی میں یوایس ایڈ کی پائیدار کوششوں کا محض ایک جزوہے۔یو ایس ایڈ کی پاکستان علاقائی اقتصادی انضمام سرگرمی ایک پانچ سالہ منصوبہ ہے ،جس کا مقصد پاکستان میں تجارتی شعبے کی ترقی کو فروغ دینا ہے۔ سرکاری ونجی مذاکرات کا یہ فورمنجی اور سرکاری شعبوں میں ادارہ سازی اور انسانی وسائل کو بہتر بناکر پاکستان کے تجارتی ماحول کو سازگار بنانے کے امریکی نصب العین کو حاصل کرنے میں بھی معاون ہے۔یو ایس ایڈ کاٹریننگ فار پاکستان پروگرام تعلیم، توانائی، اقتصادی ترقی و زراعت، صحت عامہ ، استحکام اور نظم ونسق کے شعبوں میں تربیت کا ایک کثیرسالہ منصوبہ ہے،جوحکومتِ پاکستان کے ترقیاتی اہداف سے بھی ہم آہنگ ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ