پیپلز پارٹ کے سندھ سے 12اور پنجاب سے 3سینیٹ امیدوار فائنل ،ن لیگ کے خیبر پختونخوا میں سیاسی رابطے

445

کراچی/لاہور (اسٹاف رپورٹر+نمائندہ جسارت)پاکستان پیپلزپارٹی نے سینیٹ انتخابات میں سندھ سے 12 اور پنجاب سے 3 امیدوار فائنل کرلیے۔بدھ کو پیپلز پارٹی نے مجموعی طور پر 12 نشستوں پر 24 فارم جمع کرائے گئے جن میں 12 متبادل امیدواروں کے
کاغذات نامزدگی بھی شامل ہیں۔ جنرل نشستوں پر 7 امیدواروں کے نام فائنل کیے گئے جن میں چیئرمین سینٹ رضا ربانی ، مولا بخش چانڈیو ، مرتضی وہاب ، محمد علی شاہ جاماؤ ، مصطفی نواز کھوکھر ، ایاز میر اور امام دین شکیل کے نام شامل ہیں جبکہ ٹیکنو کریٹ نشستوں پر سکندر میندھرو اور رخسانہ زبیری کے نام شامل ہیں ۔خواتین کی خصوصی نشستوں پر کرشنا کوری اور قراۃ العین مری جبکہ اقلیتی نشست پر انور لال ڈین انتخاب لڑیں گے ۔ ایم این اے فریال تالپور ، صوبائی صد ر نثار کھوڑو اور وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے امیدواروں کو کاغذات نامزدگی کے فارم دیے۔پنجاب سے3 امیدواروں میں ٹیکنوکریٹ کی نشست پر نوازش علی امیدوار ہوں گے جبکہ جنرل نشست پر نواب خرم شہزاد الیکشن لڑیں گے ۔اس کے علاوہ حنا ربانی کھر خواتین کے نشست پر الیکشن لڑیں گی ۔نثار کھوڑو کی صاحبزادی ندا کھوڑو نے بھی متبادل امیدار کے طور پر کاغذات نامزدگی جمع کرادیے ہیں۔علاوہ ازیں پاکستان مسلم لیگ فنکشنل کے رہنما سابق وزیراعلیٰ سندھ سید مظفرحسین شاہ اور پاک سرزمین پارٹی کے مبشر امام نے سینیٹ کی جنرل نشست کے لیے جب کہ ڈاکٹر موہن منجیانی نے اقلیتی نشست کے لیے کاغذات نامزدگی جمع کردادیے۔ دوسری جانب ن لیگ نے خیبرپختونخوا میں دیگر سیاسی جماعتوں سے رابطہ کرلیا ہے۔ن لیگ کی خواہش ہے کہ وہ خیبرپختونخوا میں اپوزیشن جماعتوں کو اکٹھا کرکے اپنے امیدواروں کے لیے حمایت حاصل کرسکے۔ قوی امکان ہے کہ ن لیگ اپوزیشن جماعتوں سے جوڑ توڑ کرکے خیبرپختونخوا سے اپنے امیدوار کو کامیاب کروالے گی۔ادھر جمعیت علمائے اسلام (س) کے سربراہ مولانا سمیع الحق آج جمعرات کو کاغذات نامزدگی جمع کرائیں گے۔ تحریک انصاف نے انہیں بھرپور حمایت کا یقین دلایا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ