پورے ملک میں انسداد اسمگلنگ مہم کو تیز کردیا گیاہے، ڈی جی ایف بی آر

85

ڈائریکٹر جنرل انٹیلی جنس اینڈ انوسٹی گیشن ایف بی آر شوکت علی نے کہا ہے کہ  پورے ملک میں  انسداد سمگلنگ مہم کو تیز کردیا گیاہے ،چند دن میں کروڑوں روپے کاسمگلنگ کا سامان ضبط کیاگیا، سب سے بڑا چیلنج ادارے کے اندر موجود ان لوگوں کی نشاندہی کرنا ہے جو ان سمگلروں کے معاونت کرتے ہیں۔

پیر کے روز  اسلام آبادڈائریکٹریٹ میں نئے بھرتی ہونے والے  سپاہیوں کی پاسنگ آئوٹ پریڈ کے بعد ان کے اعزاز میں دیئے گئے ظہرانے کے موقع پرخطاب اور بعد ازاں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے انھوں نے کہا انٹی سمگلنگ کے خلاف مہم میں جدت لاکر روک تھام کے لئے جدید طریقے اپنا ئے گئے ہیں اور ملک کے بند رگاہوں ،ہوائی  اڈوں کے علاوہ اندرون ملک سمگلنگ کی گاڑیوں کی انٹری پوائنٹس  کی نگرانی سخت کرد ی گئی ہے۔

شوکت علی نے کہا کہ ان نئے اقدمات کی وجہ سے   ملک بھر میں کپڑے،گاڑیوں اور ٹرانزٹ ٹریڈ کے سمگلروں  کے گر گھیرا تنگ کردیا گیا ہے،پیر کی صبح رنگ روڈ پشاور سے  ایک کنٹینر پکڑا گیا جس سے چہ ہزار گز پولیسٹر  اور پانچ ہزار ایک سو گز پردوں کا کپڑا بر آمد ہوا ہے جس  کی مالیت 60 لاکھ روپے  ہے۔

انھوں نے کہا گزشتہ مہینے نومبر میں چالیس کروڑ روپے کے سمگلنگ کا سامان اور چہ لاکھ لیٹر ایرانی تیل ضبط کیا گیا ہے جبکہ اس دوران 54گاڑیاں پکڑی گئی ہیں جن میں دس سے زیادہ لینڈ کروزر شامل ہیں۔انھوں  نے کہا  گزشتہ چند دن میں خشک میوے کے تین کنٹینرز بھی تحویل میں  لئے گئے ہیں جبکہ ملتان میں ایک بڑی کارروائی کے دوران کروڑوں روپے کا مال بر آمد کیا گیا ہے۔

ڈائریکٹر جنرل انٹیلی جنس اینڈ انوسٹی گیشن نے کہا بیس سال بعد  ڈائریکٹوریٹ میں نئی بھرتیاں کی گئی ہیں،بھرتی ہونے والی سپاہیوں سے انٹی سمگلنگ مہم میں مثبت توقعات وابستہ ہیں۔ شوکت علی نے نوجوان سپاہیوں کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے کہا کہ وہ ادارے کیلئے ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیںامید ہے کہ نوجوان ملکی مفاد میں کسی دنیاوی لالچ کو خاطر میں نہیں لائیں گے،

Print Friendly, PDF & Email
حصہ