شام: اسدی فوج کی بیرل بمباری سے15 پناہ گزین شہید

62
قنیطرہ: روسی اور اسدی افواج کی وحشیانہ بم باری کے باعث پناہ گزین پھر سے نقل مکانی کررہے ہیں‘ چھوٹی تصاویر شہید ہونے والی بچی اور خاتون کی ہیں
قنیطرہ: روسی اور اسدی افواج کی وحشیانہ بم باری کے باعث پناہ گزین پھر سے نقل مکانی کررہے ہیں‘ چھوٹی تصاویر شہید ہونے والی بچی اور خاتون کی ہیں

دمشق (انٹرنیشنل ڈیسک) شام میں اسدی فوج نے قنیطرہ میں ایک اسکول پر بیرل بم سے حملہ کر دیا جس میں موجود 15 پناہ گزیں ہلاک ہو گئے۔ مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق شامی فوج اب اُردن کی سرحد سے ملحقہ دیرہ کے کئی علاقوں پر قبضہ کرنے کے بعد پیش قدمی جاری رکھے ہوئے ہے۔ مغربی دیرہ سے قنیطرہ جانے والی شاہراہ پر واقع 3مختلف بستیوں پر گزشتہ روز کی لڑائی کے بعد حکومت نواز ملیشیا کا قبضہ ہو گیا۔ دوسری جانب شام میں موجود امریکی فوج کے انخلا کی خبروں کے حوالے سے وائٹ ہاؤس نے وضاحت کی ہے کہ جب تک شام میں ایران کا خطرہ موجود ہے اس وقت تک امریکی فوج شام سے واپس نہیں بلائی جائے گی۔ عرب ٹی وی کے مطابق امریکی قومی سلامتی کے مشیر جان بولٹن نے ایک بیان میں کہا ہے کہ شام میں داعش اور پورے مشرق وسطیٰ میں ایرانی خطرے کے خاتمے تک ہماری فوجیں شام میں موجود رہیں گی۔ واضح رہے کہ شام میں موجود فوج کی واپسی کے حوالے سے امریکی حکومت کے متضاد بیانات سامنے آتے رہے ہیں۔ گزشتہ اپریل میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا تھا کہ وہ شام سے فوجیں واپس بلانے کی تیاری کر رہے ہیں مگر ان کے اس اعلان کے بعد پینٹا گون نے مزید درجنوں فوجی شمالی شام میں تعینات کردیے تھے۔ واشنگٹن نے کرد فورسز کے زیرکنٹرول منبج شہر میں اپنے 2فوجی اڈے بھی قائم کررکھے ہیں۔ امریکی حکام کا کہنا ہے کہ شام میں داعش کے خلاف جنگ میں حاصل ہونے والی کامیابیوں سے ایران کو فائدہ اٹھانے کاموقع نہیں دیا جائے گا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ