آئی ایم ایف سے معاہدہ مسترد،عید کے بعد ملک گیر احتجاج کرینگے،سراج الحق

78
لاہور :امیر جماعت اسلامی مرکزی ذمے داران کے اجلاس سے خطاب کر رہے ہیں
لاہور :امیر جماعت اسلامی مرکزی ذمے داران کے اجلاس سے خطاب کر رہے ہیں

`لاہور(نمائندہ جسارت) امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے آئی ایم ایف کے ساتھ ہونے والے معاہدے کو مسترد کرتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ مہنگائی ، بے روزگاری اور آئی ایم ایف کی ملکی معاملات میں کھلی مداخلت کے خلاف عید کے بعد ملک بھر میں عوامی اجتماعات ، جلسے جلوس اور احتجاجی مظاہرے کیے جائیں گے ۔ حکومت نے چند ارب ڈالر کے لیے ملک کو آئی ایم ایف کے ہاتھوں گروی رکھ دیاہے۔ حکومت معاہدے کو پارلیمنٹ میں لے کر آئی نہ اس پر کسی سے مشاورت کی ۔ حکومت اپنے رویے سے پارلیمنٹ کو بے توقیر کر رہی ہے ۔حکومت نے قومی خزانے کی چابیاں آئی ایم ایف کے ہاتھ دے دی ہیں ۔ آئی ایم ایف کے ساتھ ہونے والے معاہدوں پر عمل ہوا تو آئندہ چند سال میں 80 لاکھ سے زائد پاکستانی خط غربت سے نیچے چلے جائیں گے ۔ بجلی ، گیس ، تیل کی قیمتوںاور براہ راست ٹیکسوں میں اضافے سے سب سے زیادہ متاثر وہ غریب طبقہ ہوگا جو پہلے ہی غربت کی چکی میں پس رہا ہے ۔ روپے کی قدر میں مزید کمی ہوگی جس سے مہنگائی کا طوفان آئے گا اور قرضوں کا حجم بڑھ جائے گا۔ حکومت کی معاشی پالیسیاں ملک و قوم کے مفاد میں نہیں بلکہ یہ آئی ایم ایف کے لیے بنائی جارہی ہیں ۔ ان خیالات کااظہار انہوںنے منصورہ میں ہونے والے مرکزی ذمے داران کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اجلاس میں سیکرٹری جنرل امیر العظیم ، نائب امرا اور ڈپٹی سیکرٹریز جنرل نے شرکت کی ۔سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ رمضان المبارک میں مہنگائی کی وجہ سے عوام کی پریشانیاں اور مشکلات ناقابل برداشت ہوچکی ہیں ۔ حکومت مکمل طور پر ناکام اور آئی ایم ایف کے ہاتھوں میں کھیلنے پر مجبور ہو چکی ہے ۔ حکومت نے سود سے توبہ اور خود انحصاری کا باعزت راستہ اختیار کرنے کے بجائے اپنی باگ ڈور آئی ایم ایف کے حوالے کر دی ہے۔ عالمی ساہوکار غریب ملکوں کی معیشت کو اپنے ہاتھوں میں لے کر بغیر جنگ کے ان کے وسائل پر قابض ہو جاتے ہیں ۔ حکومت نے محض اپنے اقتدار کو طول دینے کے لیے آئی ایم ایف کے ایجنڈے کو پورا کرنے کی حامی بھری ہے ۔ حکمرانوں کو ملکی مسائل اور عوام کی مشکلات سے کوئی سروکار نہیں وہ اپنے اقتدار کو برقرار رکھنے کی کوشش کر رہے ہیں ۔سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ ملک بھر کے کسان مزدور ، سرکاری و غیر سرکاری ملازمین اور عام آدمی مہنگائی کے سونامی کی وجہ سے شدید اذیت میں مبتلا ہے ۔ حکمرانوں نے عوام کو خون کے آنسو رلا دیا ہے اور اب تو لوگوں کی چیخیں آسمانوں تک بلند ہو رہی ہیں ۔ انہوںنے کہاکہ جماعت اسلامی اس گمبھیر صورتحال میں عوام کو تنہا نہیں چھوڑے گی اور رمضان کے بعدملک گیر تحریک شروع کی جائے گی ۔ انہوںنے کہاکہ ملک پر پاکستان کے عوام نہیں ، آئی ایم ایف کے خادموں کی حکومت ہے جسے برداشت نہیں کیا جاسکتا۔