اپوزیشن جماعتوں نے آئی ایم ایف سے معاہدے کو مسترد کردیا

31

اسلام آباد(نمائندہ جسارت) اپوزیشن جماعتوں نے آئی ایم ایف سے ہونے والے معاہدے کو مسترد کردیا ہے۔ان کے بقول یہ بیل آؤٹ پیکیج نہیں بلکہ سیل آؤٹ پیکیج ہے۔ترجمان مسلم لیگ (ن) مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف کا آئی ایم ایف سے معاہدہ کامیاب ہوگیا، ایک ہزار ارب کے اضافی ٹیکس لگنے سے مہنگائی کا خوفناک سونامی آئے گا، حکومت نے 6 ارب ڈالر کے لیے ملک کو گروی رکھ دیاہے۔رہنما پاکستان پیپلزپارٹی خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف سے مذاکرات کے نتیجے میں اتنی خطرناک مہنگائی ہوگی جو عوام کی برداشت سے باہر ہوگی۔ نائب صدر پاکستان پیپلز پارٹی سینیٹر شیری رحمان نے کہا کہ معاہدے سے لگتا ہے، مہنگائی کی ‘سونامی’ آنے والی ہے، کہیں مہنگائی کی یہ سونامی حکومت کو نہ لے ڈوبے۔سینیٹر پرویز رشید نے بھی آئی ایم ایف سے معاہدے کوکڑی تنقیدکانشانہ بنایا۔ علاوہ ازیں ن لیگ کے نائب صدر مریم نواز نے اپنے ردعمل میں کہا کہ 9ماہ کی حکومتی نااہلی سے ملک معاشی تباہی کے دہانے پر پہنچ چکا ہے اور اب تک تمام حکومتی تجربات بری طرح ناکام ثابت ہوئے ہیں۔