پی ایس ایل: کراچی کنگز نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز اور ملتان سلطانز نے لاہور قلندر کو شکست دیدی

149
دبئی: کراچی کنگز کے بیٹسمین جارحانہ شاٹ کھیل رہے ہیں
دبئی: کراچی کنگز کے بیٹسمین جارحانہ شاٹ کھیل رہے ہیں

دبئی (نمائندہ خصوصی) پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کے تیسرے ایڈیشن میں کراچی کنگز نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو 19رنز اور ملتان سلطانز نے لاہور قلندر کو 43 رنز سے شکست دے کر مسلسل دوسری فاتح حاصل کرلی۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان سپر لیگ کے تیسرے میچ میں ملتان سلطانز نے لاہور قلندرز کو 43 رنز سے شکست دے کر ایونٹ میں لگاتار دوسری کامیابی حاصل کر لی۔لاہور قلندرز کے کپتان برینڈن میک کولم نے ٹاس جیت کر پہلے بولنگ کا فیصلہ کیا جو درست ثابت نہ ہوا۔ملتان سلطانز کے اوپنرز نے ٹیم کو 10 اوورز میں 88 رنز کا عمدہ آغاز فراہم کیا، احمد شہزاد آؤٹ ہونے والے پہلے کھلاڑی تھے جو 33 گیندوں پر 38 رنز بنانے کے بعد آؤٹ ہوئے جبکہ صہیب مقصود صرف 4رنز ہی بنا سکے۔کمار سنگاکارا نے شاندار فارم کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے لگاتار دوسرے میچ میں نصف سنچری مکمل کرنے کے ساتھ ساتھ کپتان شعیب ملک کے ہمراہ تیسری وکٹ کے لیے 54 رنز جوڑ کر بڑے اسکور کی راہ ہموار کی، وہ 3 چھکوں اور 5چوکوں سے مزین 63 رنز کی اننگز کھیلنے کے بعد آؤٹ ہوئے۔ملتان سلطانز کو بڑا دھچکا اس وقت لگا جب جارح مزاج بلے باز کیرون پولارڈ بغیر کوئی گیند کھیلے رن آؤٹ ہو کر پویلین رخصت ہوئے۔شعیب ملک نے ایک مرتبہ قیادت کا فرض ادا کرتے ہوئے 47 رنز کی شاندار اننگز کھیلی جس کی بدولت ملتان سلطانز مقررہ اوورز میں 5 وکٹوں کے نقصان پر 179 رنز بنانے میں کامیاب رہی۔لاہور نے ہدف کا تعاقب شروع کیا تو سنیل نارائن اور فخر زمان نے اپنی ٹیم کو 32 رنز کا آغاز فراہم کیا لیکن پھر محمد عرفان نے پہلے نارائن اور پھر اگلے اوور میں کپتان برینڈن میک کولم کو آؤٹ کر کے لاہور کو 40 رنز پر 2 کھلاڑیوں سے محروم کردیا۔اس موقع پر فخر کا ساتھ دینے عمر اکمل آئے اور دونوں نے 65 رنز کی شراکت قائم کر کے اپنی ٹیم کی پوزیشن کو مستحکم کردیا لیکن کیرون پولارڈ نے 31 رنز بنانے والے عمر اکمل کو آؤٹ کر کے اپنی ٹیم کو اہم کامیابی دلائی۔دوسرے اینڈ سے فخر نے عمدہ بیٹنگ جاری رکھی اور سہیل اختر کے ساتھ مل کر اسکور 132 تک پہنچا دیا، اس موقع پر ایسا محسوس ہوتا تھا کہ لاہور قلندرز کی ٹیم باآسانی فتح اپنے نام کر لے گی لیکن ملتان سلطانز کے بولرزنے شاندار بولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے قلندرز کی بیٹنگ لائن کو تہس نہس کردیا۔فخر زمان 49 رنز بنانے کے بعد پولارڈ کی دوسری وکٹ بنے گئے جبکہ اگلے ہی اوور میں عمران طاہر نے 2 وکٹیں لے کر لاہور قلندرز کی میچ میں فتح کا خواب چکنا چور کردیا۔جنید خان نے بھی بہتی گنگا میں ہاتھ دھوتے ہوئے شاندار بولنگ کا مظاہرہ کر کے لگاتار 3 وکٹیں حاصل کر کے اپنی ہیٹ ٹرک مکمل کی اور اگلے اوور میں عمران طاہر نے شاہین آفریدی کو آؤٹ کر کے لاہور قلندرز کی بساط 136 رنز پر لپیٹ دی۔لاہور قلندرز کی آخری 7وکٹیں صرف 4 رنز کے اضافے سے گریں جس کی بدولت ملتان سلطانز نے 43 رنز سے کامیابی حاصل کر کے ایونٹ میں لگاتار دوسری فتح اپنے نام کر لی۔اس سے قبل ایونٹ کے دوسرے میچ میں کراچی کنگزنے پہلے کھیلتے ہوئے مقررہ اوورز میں 9 وکٹوں کے نقصان پر 149 رنز کا مجموعہ ترتیب دیا، جواب میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیم ہدف کے تعاقب میں مقررہ اوورز میں 9 وکٹوں پر 130 رنز بنا سکی، کنگز کے بولرز کے سامنے کوئٹہ کا کوئی بھی کھلاڑی متاثر کن کارکردگی کا مظاہرہ نہ کر سکا، عمر امین 31 اور محمد نواز 30 رنز بنا کر نمایاں رہے۔ گزشتہ روز کھیلے گئے پی ایس ایل کے دوسرے میچ میں کراچی کنگز کے کپتان عماد وسیم نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا جو ان کے لیے درست ثابت ہوا، کراچی نے پہلے کھیلتے ہوئے مقررہ اوورز میں 9 وکٹوں کے نقصان پر 149 رنز بنائے، خرم منظور اور جوئے ڈینلی نے ٹیم کو 34 رنز کا آغاز فراہم کیا، ڈینلی 14 رنز بنا کر رن آؤٹ ہو گئے، بابر اعظم کا بلا بھی نہ چلا اور صرف 10 رنز بنا کر چلتے بنے، خرم منظور نے کولن انگرام کے ساتھ مل کر ٹیم کا ا سکور 83 رنز تک پہنچا دیا، یہاں پر منظور 35 رنز بنانے کے بعد انور علی کی گیند پر کیچ آؤٹ ہو گئے، 131 کے اسکور پر کراچی کی چوتھی وکٹ گری جب انگرام 41 رنز بنا کر آرچر کی گیند کا نشانہ بنے، اس کے بعد کوئی بھی کھلاڑی خاطرخواہ کارکردگی کا مظاہرہ نہ کر سکا، شاہد آفریدی 4، عماد وسیم 2، محمد رضوان 5 اور محمد عرفان بغیر کوئی رن بنائے آؤٹ ہوئے، ٹیمل ملر 5 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے، شین واٹسن نے 3، آرچر اور انور علی نے 2، 2 اور راحت علی نے ایک وکٹ لی۔ جواب میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیم مطلوبہ ہدف کے تعاقب میں مقررہ اوورز میں 9 وکٹوں پر 130 رنز تک محدود رہی، کوئٹہ کی اننگز کا آغاز انتہائی مایوس کن تھا اور 15 رنزکے ا سکور پر اس کے 3مستند کھلاڑی آؤٹ ہو کر پویلین لوٹ گئے، واٹسن ایک، اسد شفیق 2 اور کیون پیٹرسن 6 رنز بنا کر میدان بدر ہوئے، 45 کے اسکور پر ریلی روسو 18 رنز بنانے کے بعد عماد وسیم کی گیند پر کیچ آؤٹ ہو گئے، 66 کے اسکور پر کوئٹہ کو اس وقت شدید دھچکا لگا جب کپتان سرفراز احمد 7 رنز بنا کر چلتے بنے، قائد کے آؤٹ ہونے کے بعد عمرامین کی ہمت بھی جواب دے گئی اور وہ 31 رنز بنا کر محمد عرفان کی گیند پر کیچ آؤٹ ہوئے، اس موقع پر محمد نواز نے حسن خان کے ساتھ مل کر عمدہ بیٹنگ کی اور ٹیم کاا اسکور 113 رنز تک پہنچا کر اسے فتح کی آس دلائی تاہم محمد عامر نے نواز کو آؤٹ کر کے حریف ٹیم کی جیت کی امیدوں پر پانی پھیر دیا، نواز نے 30 رنز بنائے، انور علی 7 اور آرچر 5 رنز بنا سکے، حسن خان 17 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے، عماد وسیم، ملز اور محمد عرفان نے 2,2 جبکہ آفریدی اور محمد عامر نے ایک، ایک وکٹ لی۔