اسلام آباد کا امن بحال کرانے پر فوج مبارکباد کی مستحق ہے، طاہر القادری

228
لاہور: عوامی تحریک کے سربراہ طاہر القادری وطن واپسی پر میڈیا سے گفتگو کررہے ہیں
لاہور: عوامی تحریک کے سربراہ طاہر القادری وطن واپسی پر میڈیا سے گفتگو کررہے ہیں

لاہور (نمائندہ جسارت) پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہرالقادری گزشتہ روز وطن پہنچ گئے۔ علامہ اقبال انٹرنیشنل ائرپورٹ لاہور پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ فوج سے معاہدے پر اسلام آباد اور لوگوں کا امن بحال ہوا، جس پر پاک فوج مبارکباد کی مستحق ہے۔ حکومت اپنی بدنیتی اور خیانت کی وجہ سے اس معاملے کو الجھانا، ملک میں خانہ جنگی کروانا چاہتی تھی مگر اپنے ناپاک ارادوں میں کامیاب نہ ہو سکی۔ سربراہ عوامی تحریک نے کہا کہ ان ظالموں نے رات کے اندھیرے میں چوری چھپے
عقیدہ ختم نبوت پر حملہ کیا۔ ختم نبوت کے قانون پر حملہ کرنے والی حکومت کا استعفیٰ پوری قوم کا مطالبہ ہے۔ طاہر القادری نے کہا کہ حکمران خاندان کی رسوائی 2014ء کے دھرنے کا منطقی نتیجہ ہے۔ حکمران سر اٹھا کر تو کیا سر چھپا کر بھی گھروں سے نکلنے کے قابل نہیں رہے۔ نواز شریف کے چہرے پر جعلی اور مصنوعی جرأت ہے۔ خبر دے رہا ہوں وہ در پردہ معافی کیلیے پیغامات اور بندے بھجوا رہے ہیں اور یہ لکھ کر بھی دینے کیلیے تیار ہیں کہ معافی کے عوض خاندان کا کوئی بچہ بھی سیاست میں نہیں آئے گا۔ انہوں نے کہا کہ کوئی باغیرت اب انہیں معافی دے گا اور نہ ہی مشرف والی غلطی دہرائے گا۔ انہوں نے کہا کہ جو حکومت پارلیمنٹ میں مسائل حل نہیں کر سکتی، اپنے شہریوں سے مذاکرات نہیں کر سکتی، گھروں سے نہیں نکل سکتی اسے پاکستان کی مزید بے عزتی کرنے کا کوئی حق نہیں، اسمبلیاں تحلیل کر کے گھر چلی جائے، بس چند روز کی بات ہے یہ اگر اب نہیں جائیں گے تو پھر ٹھڈے، جوتے اور ڈنڈے کھا کر جائیں گے۔ لاہور ائرپورٹ پر سربراہ عوامی تحریک کا کارکنوں، رہنماؤں نے پرتپاک استقبال کیا اور گو نظام گو اور پاک فوج زندہ باد کے فلک شگاف نعرے لگائے۔