پاکستان قونصلیٹ میں وفاقی وزیر پیر صدرالدین راشدی کی کھلی کچہری

227

سعودی عرب میں او آئی سی کی دو روزہ لیبر کانفرنس کے اختتام پر پاکستان قونصلیٹ جدہ میں وفاقی وزیر برائے سمندر پار پاکستانیز اور ترقی و انسانی وسائل پیر سید صدر الدین شاه راشدی نے برادری کی کھلی کچہری سے خطاب کیا۔ جس میں قونصلیٹ افسران، ممتاز شخصیات اور میڈیا کے نمائندوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ وفاقی وزیر نےکہا کہ سعودی عرب حرمین شریفین کی بدولت دنیا کے تمام مسلمانوں کے لیے مرکزی مقدس مقام رکھتا ہے۔ پاکستان اور سعودی عرب میں کئی دہائیوں سے قریبی اور برادرانہ تعلقات ہیں۔ سعودی عرب کی ترقی میں پاکستانی برادری نے اپنا قیمتی اور مثبت کردار ادا کیا ہے اور سعودی عرب میں پاکستانی کارکنوں کی بھرپور موجودگی اس حقیقت کا ثبوت ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سی پیک منصوبہ تمام پاکستانی نوجوانوں کے لیے ملازمت اور سرمایہ کاری کے مواقع فراہم کرتا ہے۔ یہ ان سمندر پارپاکستانیوں کو بھی مواقع فراہم کرتا ہے جو اپنے وطن میں سرمایہ کاری کرنا چاہتے ہیں۔
بیرون ملک رہنے والے پاکستانیوں سے متعلق پالیسی بنانے اور اس پر عمل کے بارے میں ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے وفاقی وزیر نے کہا کہ حکومت نے اوورسیز پاکستانیز مشاورتی کونسل تشکیل دی ہے۔ اس کے ارکان بھی اوورسیز پاکستانی برادری سے تعلق رکھتے ہیں۔ یہ کونسل جو تجاویز دے گی، حکومت ان کی بنیاد پالیسی بنائے گی۔ انہوں نے برادری کے تمام ارکان سے کہا کہ کونسل کو اپنی تجاویز پیش کریں ۔
انہوں نے بتایا کہ اوپی ایف کی ویب سائٹ پر ایک ویب پورٹل بھی تیار کیا گیا ہے جہاں شکایت کنندہ اپنی شکایتوں یا تجاویز کو براہ راست پوسٹ کرسکتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ یہ تجاویز ہماری پالیسی کو مزید بہتر بنانے میں مدد دیں گے۔ قبل ازیں تلاوت قران پاک سے کھلی کچہری کا آغاز ہوا۔ وائس قونصلر ویلفیئر نجیب اللہ خان نے وفاقی وزیرکا خیر مقدم کیا اورپاکستانی کمیونٹی کے مسائل کے حل میں خصوصی دلچسپی لینے پر وفاقی وزیر کا شکر یہ ادا کیا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ