بدین، بد ترین قلت آب کے باعث مکین نقل مکانی کرنے پر مجبور

59

 

بدین (نمائندہ جسارت) بدین میں پانی کی بدترین قلت، زراعت کی تباہی کے بعد ہزاروں افراد کی نقل مکانی کرنے کیخلاف جسقم چیئرمین صنعان خان قریشی، نواز خان زئور، ڈاکٹر سرور خشک، امجد مہیسرکی قیادت میں پانی کی شدید قلت کیخلاف جئے سندھ قومی محاذ کی جانب سے اللہ والا چوک سے بدین پریس کلب تک ریلی نکالی گئی۔ ریلی میں جئے سندھ کے کارکنوں نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ ریلی کی قیادت جئے سندھ قومی محاذ کے چیئرمین صنعان قریشی نے کی۔ ریلی شہر کا گشت کرتی ہوئی بدین پریس کلب پہنچے، کارکنوں کی جانب سے پانی کی شدید قلت کیخلاف بدین پریس کلب کے سامنے احتجاج کیا گیا۔ جسقم کے چیئرمین صنعان قریشی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب نے سندھ کا پانی بند کرکے سندھیوں کو آبی دہشت گرد قرار دیا ہے، پورے سندھ میں پانی کا بحران ہے لیکن بدین میں بڑی تباہی آچکی ہے، جانوروں کے لیے بھی پینے کا پانی دستیاب نہیں ہے، غیر قانونی دھکے لگا کر بدین کا پانی روک رکھا ہے، جس کے باعث لاکھوں ایکڑ اراضی تباہ ہوچکی ہے، لوگوں نے آبائو اجداد کے گھر چھوڑ کر دوسرے مقامات پر نقل مکانی شروع کردی ہے۔ بدین میں گزشتہ دس ماہ سے پانی کی شدید قلت ہے جس کی وجہ سے بدین کی زمینیں بنجر بن گئی ہیں، پانی نہ ہونے کی وجہ سے کاروبار مکمل تباہ ہوگیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ بدین کا پانی بااثر افراد کی جانب سے غیر قانونی رکاوٹیں لگا کر چوری کیا جارہا ہے۔ بدین کے عوام پانی کی بوند بوند کو ترس گئے ہیں، بدین کی ساحلی پٹی کے علاقوں میں پانی نہ ہونے کی وجہ سے علاقہ مکین نقل مکانی پر مجبور ہوگئے۔ صنعان قریشی کا کہنا تھا کہ بدین کو اس کے حصے کا پانی دیا جائے۔