پاکستان نے سلامتی کونسل کی رکنیت کیلئے بھارت کی حمایت کردی

121

نیویارک(صباح نیوز)پاکستان نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی غیر مستقل رکنیت کے لیے حریف ملک بھارت کی حمایت کردی۔ پاکستان کی جانب سے بھارت کی حمایت کشمیر پر اصولی موقف سے پیچھے ہٹنا اور کشمیریوں کی دل آزاری کے ساتھ ساتھ کشمیر کاز کو نقصان پہنچنے کے مترادف ہے ۔بھارتی اخبار’’انڈیا ٹوڈے‘‘ کے مطابق 55 ممالک پر مشتمل ایشیاء پیسیفک گروپ نے متفقہ طور پر سلامتی کونسل کی غیر مستقل نشست کے لیے بھارت کے بطور امیدوار کی توثیق کی ہے جو سفارتی محاذ پر بھارت کی بہت بڑی کامیابی ہے، بھارت کی بطور امید وار حمایت کرنے والے 55 ممالک میں چین،افغانستان،بنگلا دیش، بھوٹان،انڈونیشیا، ایران، جاپان، کویت ،کرغزستان، ملائیشیا ،مالدیپ ،میانمر، نیپال، قطر،سعودی عرب،سری لنکا، شام، ترکی،متحدہ عرب امارات اور ویتنام شامل ہیں۔15 رکنی کونسل کے 5 غیرمستقل ارکان کی 2021-22ء مدت کے لیے انتخابات اگلے سال جون کے قریب ہوںگے۔پاکستان کی جانب سے سلامتی کونسل کے لیے بھارت کی حمایت کشمیر پر اپنے اصولی موقف سے پیچھے ہٹنا ہے جس سے کشمیریوں کی دل آزاری کے ساتھ ساتھ کشمیر کاز کو نقصان پہنچے گا۔