حکومت کو گھر بھیجنے کا وقت آگیا ہے،شاہد خاقان عباسی

93

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے سینئرنائب صدر شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ وقت آگیا ہے کہ حکومت کو گھر بھیجا جائے۔کوٹ لکھپت جیل کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ ہمیں حکومت کو کیا گرانا ہے یہ اپنے وزن سے خود ہی گر جائیں گے ، آل پارٹیز کانفرنس کی حتمی تاریخ کا اعلان مولانا فضل الرحمن کریں گے، ہم عملی اقدامات کی طرف پیش رفت کررہے ہیں اور جب سیاسی جماعتیں مشاورت کے لیے بیٹھتی ہیں تو ہی اس میں سے کچھ نکلتا ہے۔ ہمیں آئین کے دائرے میں رہتے ہوئے کیا اقدامات اٹھانے ہیں اس کا فیصلہ آل پارٹیز کانفرنس میں ہوگا۔شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ نعروں کے ساتھ روپے کی قدر واپس نہیں آئے گی، آج معیشت تباہ حال ہے جس کا خمیازہ پوری قوم کو بھگتنا پڑرہا ہے۔ آنے والے دنوں میں (ن) لیگ مزید متحرک ہو گی۔ حکومت نے معیشت تباہ کر دی، حکومت نے ٹیم بدل دی، نئی ٹیم سے کوئی امید نہیں، حکومت کی پالیسیاں ناکام ہوچکی ہیں۔ وقت آگیاہے کہ حکومت کو گھر بھیجا جائے۔میڈیا سے بات کرتے ہوئے مشاہد اللہ خان نے کہا کہ حکومت نے پورے ملک میں لوگوں کو تنگ کیا ہوا ہے،لوگوں کے گھر گرانے تھے تو پہلے مہینے میں گرا دیے لیکن ریلیف کے لیے 2 سال کا وقت مانگ رہے ہیں۔ملک میں کوئی کام نہیں ہورہا ،معیشت ، انڈسٹری نہیں چل رہی ،کٹھ پتلی وزیر اعظم نے ملک کو آئی ایم ایف کے حوالے کر دیاہے، ہم آئی ایم ایف کے پاس گئے تو ایف بی آر چیئرمین کو ہٹانے کی شرط نہیں تھی،آئی ایم ایف پیسے دے رہا ہے تو اپنا منیجر بٹھا دیا ہے۔ ملک 9مہینے میں پیچھے گیاہے،ہمیں کرپٹ کہتے ہیں لیکن عمران خان وزیراعظم سمیت سب کی کرپشن کی کہانیاں سامنے آ رہی ہیں۔مشاہد اللہ نے کہا کہ ہم آئی ایم ایف کے پاس گئے تو انہوں نے اپنے بندے لگانے کا مطالبہ نہیں کیا۔ عمران خان آئی ایم ایف کے ایجنٹ کا کردار ادا کر رہا ہے،سونامی تباہی کی نشانی ہوتی ہے اور یہی ہم کہتے تھے۔رانا مشہود نے کہا کہ 2018 کے انتخابات میں عوام کے مینڈیٹ کی توہین کی گئی۔ ہم نے فیصلہ کر لیا ہے کہ 28 مئی سے پورے پاکستان میں آواز گونجنے جارہی ہے، اس آواز کو اسلام آباد سے بلند کریں گے، اب ہم نے فیصلے کرنا شروع کردیے ہیں، ان نالائقوں کو مزید وقت نہیں دیا جاسکتا، اپوزیشن کا کام ہوتا ہے کہ وہ حکومت کی غلط پالیسیوں پر آواز اٹھائے۔