پی آئی اے کی ٹورنٹو سے کراچی آنے والی پرواز 22 گھنٹے تاخیر کا شکار

143

کراچی (اسٹاف رپورٹر) پی آئی اے کی کینیڈا کے شہر ٹورنٹو سے کراچی آنے والی پرواز 22 گھنٹے تاخیر کا شکار ہے۔ ٹورنٹو ائرپورٹ پر مسافروں نے پی آئی اے افسران کے رویے کیخلاف شدید احتجاج کیا ہے اور اسے نئی حکومت کیخلاف سازش قرار دیا ہے۔ پی آئی اے کی پیر کو ٹورنٹو سے کراچی آنے والی پرواز PK 784 کا بوئنگ 777 طیارہ ٹورنٹو ائرپورٹ پر فنی خرابی کا شکار ہوگیا۔ پی آئی اے ترجمان کا کہنا ہے کہ تکنیکی خرابی کے باعث پرواز کی روانگی میں 22 گھنٹے سے زاید کی تاخیر ہو گی اور اس پرواز کی روانگی اب کینیڈا کے مقامی وقت کے مطابق پیر کی شام ساڑھے 6 بجے ہو گی۔ پی آئی اے ترجمان کا اصرار تھا کہ مسافروں کا مکمل خیال رکھا جارہا ہے اور انہیں اچھا کھانا اور ہوٹل میں رہائش فراہم کی جارہی ہے۔ پرواز میں تاخیر پر پی آئی اے انتظامیہ نے معذرت کا اظہار کیا ہے۔ دوسری جانب مسافروں نے شکایات کا انبار لگا دیا ہے ، مسافروں نے فون پر بتایا کہ انہیں ائرپورٹ پر 12 گھنٹے خوار کرانے کے بعد پرواز میں تاخیر کا بتایا گیا۔ انہوں نے کہا کہ پی آئی اے کا ٹورنٹو میں تعینات عملہ غائب رہا اورمسافروں کی کوئی مدد نہیں کی نہ ہی وقت پر کھانا اور ہوٹل دیا گیا جبکہ احتجاج کرنے پر پولیس کو طلب کرلیا گیا۔ مسافروں نے الزام لگایا کہ پی آئی اے افسران کا بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے ساتھ یہ رویہ نئی حکومت کے خلاف سازش ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ