‘لوبیا ایک بہترین اور طاقتور غذا ہے’

678

لوبیا دالوں کی ایک قسم ہے جو متعدد طبی فوائد کے حامل ہے جبکہ اس میں کیلوریز کی مقدار بہت کم ہوتی ہے مگر صحت کے لیے فائدہ مند اجزاءکی تعداد بہت زیادہ موجود ہوتی ہے۔

سرخ اور سفید لوبیا ایک شاندار غذا ہے جس کے صحت کے حوالے سے فوائد حیرت انگیز ہیں جبکہ ہمارے گھروں میں سرخ لوبیا بہت کم پکائی جاتی ہے حالانکہ اگر ہمیں اس کے فوائد کا علم ہوتو ہم اس کو روزانہ نہیں تو مہینے میں کم ازکم آٹھ دس مرتبہ تو ضرور پکائیں گے۔

پروٹین، فائبر، فولیٹ، میگنیشیم، پوٹاشیم اور دیگر اہم غذائی اجزاء سے بھرپور ‘لال لوبیا’ کو غریبوں کا گوشت کہا جاتا ہے اور لوبیا ایک بہترین اور طاقتور غذا ہے۔

خیال رہے ہمارے ہاں لال لوبیا کا استعمال عام نہیں ہے لیکن اُمید ہےکہ اس کی افادیت جاننے کے بعد اسے خوراک میں ضرور شامل کیا جانے لگے گا کیونکہ لال لوبیا کے بے شمار فوائد ہیں جس میں سے چند ذیل ہیں ۔:۔

دل کی صحت بہتر کرے

ایسی غذائیں جن میں پوٹاشیم پائی جاتی ہے وہ دل کی اچھی صحت کے لیے فائدہ مند ہوتی ہیں جبکہ خون کی شریانوں سے جڑے امراض کا خطرہ بھی کم ہوتا ہے، لوبیا بھی ایسی ہی غذا ہے جو کہ پوٹاشیم کے ساتھ ساتھ کم فیٹ اور کیلوریز کے ساتھ ہے اور اسی لیے دل کے لیے فائدہ مند مانا جاتا ہے۔

جلد، ناخن، بال اور مسلز مضبوط بنائے

پروٹین جسمانی بلاکس کی تشکیل کے لیے ضروری ہوتے ہیں اور لوبیا میں پروٹین کی وافر مقدار پائی جاتی ہے، پروٹین سے جلد، ناخن، بال اور مسلز مضبوط ہوتے ہیں جبکہ یہ عمر کے ساتھ خلیات پر مرتب ہونے والے اثرات کا اثر بھی کم کرنے والا جز ہے۔

بینائی بہتر کرے

دالیں وٹامن اے کی وجہ سے آنکھوں کی صحت بہتر بناتی ہیں، لوبیا میں وٹامن اے کی مقدار پالک سے زیادہ ہوتی ہے۔

ہاضمہ بہتر کرے

لوبیا میں موجود فائبر آنتوں کی حرکت کو بہت کم وقت میں بہتر کرتی ہے جس سے قبض سے نجات ملتی ہے۔

شوگر لیول بہتر کرے

لوبیا میں موجود فائبر بلڈ شوگر لیول کو کم کرتا ہے جبکہ یہ انسولین اور لپڈ کی سطح بھی بہتر بناتا ہے، ذیابیطس ٹائپ ٹو کے شکار مریضوں کو بھی اسے بطور غذا استعمال کرنے کا مشورہ دیا جاتا ہے تاہم اس حوالے سے ڈاکٹر سے پہلے مشورہ کرنا ضروری ہے۔

جسمانی وزن میں کمی

غذائی فائبر پیٹ کو زیادہ دیر تک بھرا رکھتا ہے جبکہ بے وقت کھانے کی خواہش کو بھی کنٹرول کرتا ہے، لوبیا کھانے کی عادت سے موٹاپے کو ہمیشہ خود سے دور رکھنے میں مدد ملتی ہے جبکہ جسمانی توانائی میں کمی نہیں آتی۔

بلڈ پریشر کے لیے بھی فائدہ مند

ہائی بلڈ پریشر سے فالج اور ہارٹ اٹیک جیسے جان لیوا امراض کا خطرہ بڑھتا ہے، ہائی بلڈ پریشر کو کنٹرول میں رکھنے کے لیے لوبیا انتہائی موثر ثابت ہوتا ہے جس کی وجہ اس میں موجود پوٹاشیم ہے۔

خون کی کمی دور کرے

اگر جسم میں ہیموگلوبن کی کمی کا سامان ہے تو آئرن سے بھرپور غذائیں جیسے لوبیا کو لازمی غذا کا حصہ بنائیں۔ اسے کھانا معمول بنانا خون میں آئرن کی سطح بڑھا کر خون کی کمی کو دور کرتا ہے۔

ہڈیوں کی صحت بہتر کرے

عمر بڑھنے سے ہڈیوں کا حجم گھٹنے لگتا ہے جس سے فریکچر کا خطرہ بڑھتا ہے۔ لوبیا میں موجود کیلشیئم، فاسفورس، پوٹاشیم، میگنیشم، سوڈیم وغیرہ ہڈیوں کو مضبوط بنانے میں مدد دیتے ہیں۔

کینسر سے بچاؤ

سرخ لوبیا میں مینگنیز بکثرت پائی جاتی ہے جو ایک انٹی-آکسیڈنٹ دفاع کا کا م کرتی ہے اور اس سے خلیات کی سطح پر فری ریڈیکلز میں کمی ہوتی ہے اور  اس کے علاوہ اس میں وٹامن کے بھی موجود ہوتا ہے جو خلیات کو آکسی ڈیٹو سٹریس سے بچاتے ہیں اور یوں کینسر کے نخدشے میں مزید کمی کرتا ہے۔

لوبیا مکمل پروٹین پر مبنی اور کولیسٹرول سے پاک غذا ہے، جو مجموعی صحت کی بہتری کے لیے بےحد ضروری ہے۔

لال لوبیا کے استعمال کے طریقے ۔:۔

لال لوبیا کو کئی طریقوں سے استعمال کیا جاسکتا ہے، اسے اچھی طرح دھو کر رات بھر بھگودیں پھر اسے اُبال کر اس سے مختلف ڈشز بنالیں جبکہ بچوں کو کھلانے کے لیے اسے مختلف طرح کے کٹلس میں شامل کرسکتے ہیں۔

چھوٹے بچے پراٹھا شوق سے کھاتے ہیں اور اسے آلو کے ساتھ میش کرکے اس کا پراٹھا بناکر بچوں کو کھلا سکتے ہیں جبکہ بچوں کے پسندیدہ نوڈلز اس میں لال لوبیا شامل کریں اور اپنے بچوں کو طاقت ور بنائیں۔

بڑوں کے لیے اسے اُبال کر چھوٹے چھوٹے پیکٹ بنا کر رکھ لیں اور جب بھی سلاد بنائیں اس میں شامل کرلیں جبکہ  سوپ کے ذائقے اور طاقت میں اضافے کے لیے اس میں لال لوبیا شامل کریں۔

خیال رہے  جب بھی کوئی سبزی کی ترکاری بنائیں اس میں لال لوبیا شامل کرسکتے ہیں جبکہ چناچاٹ کی طرح آپ اس کی بھی مزیدار چاٹ بناسکتے ہیں یامکس چنا چاٹ میں بھی اس کا استعمال کیاجاسکتاہے۔

گھر میں بنائے گئے اسپرنگ رولز اور سموسوں میں بھی اس کا استعمال کیا جاسکتا ہے اور اس کو قیمہ کے ساتھ اسکاسالن بہت لذیذ بنتا ہے جبکہ چائنیز رائس یا سبزی پلاؤ میں بھی لال لوبیا کو شامل کیا جاسکتا ہے۔