حافظ نعیم کی کے الیکٹرک کے میٹر رینٹ و ڈبل بینک چارجز ختم ہونے پر شہریوں کو مباکباد

159

کراچی (اسٹاف رپورٹر) جماعت اسلامی کے دیرینہ مطالبے پر کراچی کے شہریوں سے کے الیکٹرک کی جانب سے ناجائز میٹر رینٹ اور ڈبل بینک چارجز کی وصولی کے خاتمے پر جماعت اسلامی کے امیر حافظ نعیم الرحمن نے کراچی کے شہریوں کو مبارکباد دیتے ہوئے اسے جماعت اسلامی کی طرف سے تحفہ قرار دیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ نہ صرف اس ظالمانہ اقدام کا خاتمہ ہوا بلکہ یکم جولائی 2016ء سے گزشتہ 30ماہ تک ان دونوں مدوں میں ایک ارب سے زائد وصول شدہ رقم کی واپسی بھی اس ماہ کے بلوں کے ذریعے شروع ہو گئی ہے ۔ جماعت اسلامی کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمن نے نیپرا کی جانب سے عاید کردہ کے الیکٹرک کی 7سالہ ملٹی ائر ٹیرف کے حوالے سے سماعت کے موقع پر کراچی کے شہریوں کی طرف سے ان کا مقدمہ لڑتے ہوئے ناجائز میٹر رینٹ اور ڈبل بینک چارجز کے خاتمے کا مطالبہ کیا تھا ۔ نیپرا نے جماعت اسلامی کے مطالبے کو جائز قرار دیتے ہوئے اپنا فیصلہ سنایا تھا۔ جس پر اس ماہ جون سے عمل درآمد شروع ہو گیا ہے اور اب تک ڈبل بینک چارجز اور میٹر رینٹ کی مد میں جون 2016ء سے کراچی کے شہریوں سے ایک ارب سے زائد وصول شدہ رقم کی واپسی ماہ جون کے بلوں کے ذریعے شروع ہو گئی ہے ۔ واضح رہے کہ یہ فیصلہ نیپرا نے 20مارچ 2017ء کو سنایا تھا لیکن کے الیکٹرک نے سندھ ہائی کورٹ سے حکم امتناع حاصل کر لیا تھا جو گزشتہ ماہ ختم ہو گیا ہے ۔ حکم امتناع کے ختم ہو تے ہی اب یہ فیصلہ نافذ العمل ہو گیا ہے ۔نیپرا کا تفصیلی فیصلہ نیپرا کی ویب سائٹ پر دیکھا جا سکتا ہے ۔حافظ نعیم الرحمن نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ جماعت اسلامی کے الیکٹرک سے کلا بیک کی مد میں 25ارب سے زائد واجب الادا رقم بھی جلد کراچی کے شہریوں کو بلوں کے ذریعے واپس کرائے گی ۔ انہوں نے کراچی کے شہریوں سے کہا کہ وہ کے الیکٹرک کی جانب سے اووربلنگ و دیگر شکایات کے ازالے کے لیے جماعت اسلامی پبلک ایڈ کمیٹی کے الیکٹرک کمپلینٹ سیل سے رابطہ کر سکتے ہیں ،انہوں نے نیپرا سے مطالبہ کیا کہ شدید گرمی میں طویل و غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا نوٹس لے کر کے الیکٹرک کے خلاف کارروائی کرے اورلوڈشیڈنگ کا خاتمہ کرائے ۔