پاک بھارت فضائی راستے28 جون تک بند رہیں گے

63

کراچی (نمائندہ جسارت ) پاکستان اور بھارت کے درمیان3 فضائی راستوں کے علاوہ بقیہ تمام راستے 28 جون تک بند رہیں گے ۔ پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی نے نیا نوٹیفکیشن (نوٹم ) جاری کیا ہے جس میں کہا گیا کہ کمرشل پروازوں کے لیے بھارت اور پاکستان کے درمیان اوور فلائنگ کے3 فضائی روٹس 28 جون 2019ء تک بدستور کھلے رہیں گے۔ پاکستان اور بھارت کے درمیان اوور فلائنگ کے لیے مجموعی طور پر 11 راستے ہیں جس میں سے3 کھلے ہوئے ہیں۔ کھلے ہوئے راستوں میں سے پہلا
راستہ بھارت سے آتا ہوابحیرہ عرب سے پنجگور ہوتا ہوا ایران جاتا ہے۔ دوسرا راستہ بھی بھارت سے آکر بحیرہ عرب سے پنجگور ہوتا ہوا ایران جاتا ہے جبکہ تیسرا راستہ ایران سے جیوانی اور پھر بدین کے قریب سمندر سے ہوتا ہوا بھارت جاتاہے۔ کھلے ہوئے3 راستوں میں سے آخری راستہ جون میں کھولا گیا تھا ۔ بحیرہ عرب پر پاکستانی حدود میں پرواز کرتے اور بدین کے اوپر سے گزر کر بھارت میں داخل ہونے والے راستے کو پاکستان نے مارچ میں کھول دیا تھا مگر بھارت کی جانب سے یہ روٹ2 جون کو کھولا گیا۔انڈیگو ایرلائن پہلی بھارتی ایر لائن ہے جس کی دبئی سے دہلی جانے والی پرواز اس راستے کو استعمال کرتی ہوئی پاکستانی حدود سے گزر کر بھارت میں داخل ہوئی۔ اس فضائی راستے کے کھلنے سے بھارتی ایر لائن کو 22 منٹ کی پرواز اور 12 سو کلو ایندھن کی بچت ہوئی۔ابھی تک پاک بھارت راستے کھلنے کا فائدہ کسی بھی پاکستانی ائرلائن نے نہیں اٹھایا ہے۔یاد رہے کہ بھارتی فضائیہ کی پاکستانی حدود میں جارحیت کے بعد اس سال 27 فروری سے دونوں ملکوں کی فضائی حدودبند ہیں۔
فضائی راستے