بجٹ میں زیرو یٹیڈ کے تسلسل کے لیے وزیر اعظم فوری مداخلت کریں

49

 

کراچی( اسٹاف رپورٹر)پانچ زیرو ریٹیڈ ایکسپورٹ ایسوسی ایشنز نے ملک کے وسیع تر مفاد اور ایکسپورٹس میں اضافے کی خاطر ایکسپورٹ سیکٹر کے لئے زیرو ریٹیڈ اسکیم کو جاری رکھنے کے لئے وزیر اعظم پاکستان عمران خان کوفوری مداخلت کی اپیل کی ہے۔ پانچ زیرو ریٹیڈ ایکسپورٹ سیکٹر ایسوسی ایشنز کے چیئرمین حضرات نے مشترکہ پریس کانفرنس میں شدید تشویش اور تحفظات کاا ظہار کرتے ہوئے کہا کہ زیرو ریٹیڈاسکیم ختم کرنا ایکسپورٹ انڈسٹریز کے لئے مسائل اور بربادی کا باعث بنے گا،سرمایہ بیرون ملک منتقل ہو گا، بڑے پیمانے پر بے روزگاری ہوگی اور کثیر زرمبادلہ کا نقصان ہوگا۔کراچی پریس کلب میں منعقدہ پریس کانفرنس اور پُرامن احتجاج کے موقع پر انھوں نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ حکومت معاملے اور صورتحال کی نزاکت کو سمجھنا نہیں چاہتی اور یکطرفہ طور پر آئی ایم ایف کی شرائط ایکسپورٹرز پر زبردستی لاگو کرنے پر بضد ہے۔انھوں نے کہا کہ پاکستان ایک خودمختار ملک ہے جس کے فیصلے بھی پاکستان نے ہی کرنے ہیںجو ملک اور عوام کے مفاد میں ہونے چاہیئے۔ انھوں نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے بتایا کہ حکومت کے ساتھ گزشتہ کئی روز سے ہونے والے مزاکرات بے نتیجہ اور لاحاصل رہے۔ متعلقہ حکومتی حلقہ اپنی ضد پر قائم ہے اور زیرو ریٹیڈ سیکٹر کے مطالبے کو ماننے پر سنجید ہ نہیں ہے۔انھوں نے بتایا کہ زیرو ریٹیڈ ایکسپورٹ سیکٹر نے حکومت کی نئی ٹیکس ریجیم جس میں زیرو ریٹنگ کو ختم کرنے کو تجویز زیر غور ہے کو ماننے سے اصولی طور پر یکسر انکار کر دیا ہے اگر حکومت ایسا کرے گی تو وہ یکطرفہ فیصلہ ہو گا جس کی تمام تر ذمہ داری بھی حکومت پر عائد ہو گی۔واضح رہے کہ ایکسپورٹرز کے اربوں روپے کے کلیمز پہلے ہی حکومتوں نے تاحال ادا نہیں کئے اور حکومتیں اپنے وعدوں سے منحرف ہو گئیں اسلئے زیرو ریٹیڈ اسکیم کو جاری رکھنے کے لئے ایکسپورٹ سیکٹر اپنی اصولی موقف پر قائم ہے۔زیروریٹنگ کے خاتمہ کی صورت میںبے ایمان ایف بی آر اہلکاروں کی ملی بھگت سے کرپشن میں اضافہ ہو گا، انڈر اور اوور انوائسنگ بڑھے گی، ریفنڈز میں فراڈ وغیرہ ہوں گے۔