شامی صوبے ادلب کی صورت حال پر ترکی اور روس کے وزرائے دفاع کی گفتگو

36

انقرہ ؍ نیو یارک (انٹرنیشنل ڈیسک) ترک وزیر دفاع خلوصی آقار نے شامی صوبے ادلب کی خراب صورتحال پر اپنے روسی ہم منصب کے ساتھ ٹیلی فون پر گفتگو میں کشیدگی اور مسلح کارروائیاں کم کرنے پر زور دیا۔ دوسری جانب ترک صدر رجب طیب اِردوان نے بھی ادلب میں بگڑتے حالات کا ذمے دار اسد حکومت کو ٹھہرایا ہے۔ اِردوان کے مطابق دمشق حکومت روس اور ترکی کے تعلقات خراب کرنے کی کوشش میں ہے۔ اُدھر اقوامِ متحدہ کے سیکرٹری جنرل کے ترجمان فرحان حق نے پریس بریفنگ میں کسی فریق کا نام لیے بغیر مطالبہ کیا ہے کہ ادلب کی فضائی حدود میں حملے بند کیے جائیں۔