اعلیٰ ثانوی تعلیمی بورڈ کے ناظم امتحانات جعل سازی میں ملوث نکلے

129
کراچی: چیئرمین انٹر بورڈ کا عظیم صدیقی کیخلاف کارروائی کیلیے سیکرٹری بورڈ کو لکھے گئے خط کا عکس
کراچی: چیئرمین انٹر بورڈ کا عظیم صدیقی کیخلاف کارروائی کیلیے سیکرٹری بورڈ کو لکھے گئے خط کا عکس

کراچی(رپورٹ:حماد حسین)اعلیٰ ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی کے ناظم امتحانات جعلی بلنگ میں ملوث نکلے،2017ء میں نجی اسپتال کے1لاکھ سے زاید کے جعلی بل جمع کرائے تھے، چیئرمین کی کارروائی کی ہدایات ردی کی ٹوکری میں ڈال دی گئی۔ذرائع کے مطابق اعلیٰ ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی کے چیئرمین کی جانب سے سیکرٹری اعلیٰ ثانوی تعلیمی بورڈکو ایک مکتوب نمبرBIE/CHAIRMAN/PS-05/1847تحریر کیا گیا ،جس میں تحریر تھا کہ آفس میمو نمبر BIE/ADMIN(EStt)/PM-197/6337/2017 بتاریخ 10 جنوری 2017ء جس میں موضوع منسوب تھا کہ محمد عظیم صدیقی ڈی سی ایIIIکو نامناسب طور پر میڈیکل اور تشخیص کی مد میں 1لاکھ 25ہزار68روپے جاری کیے گئے۔ عہدیدار کی جانب سے جمع کرائے گئے بلوں کی تصدیق اسپتال سے کرائی گئی تو ظاہر ہوا کہ بلوں کا اسپتال کے معاملات سے کوئی تعلق نہیں ہے۔اس طرح کی دھوکا دہی سے ادارے کو مالی خسارے اور مالی بے ضابطگی کے زمرے میں آتی ہے۔اور ان کے خلاف سنجیدہ تادیبی کارروائی کی جائے۔مکتوب میں مزید تحریر تھا کہ لہٰذا آپ کو ہدایات دی جاتی ہے کہا کہ مذکورہ افسر کے خلاف بورڈ کے قوانین کے مطابق کارروائی کی جائے۔ان کی جانب سییکم جولائی2016ء سے اب تک کے بلوں کی بھی تصدیق کرائی جائے۔ذرائع کا مزید کہنا تھا کہ اس مکتوب کے بعداس وقت کے قائم مقام سیکرٹری عظیم احمد نے بھی وضاحت طلب کی تھی جس پر مذکورہ افسر نے جوابی خط میں تحریر کیا کہ میرے مالی معاملات بہتر نہیں ہیں جس کے باعث میں یہ رقم یکمشت ادا کرنا مشکل ہے۔اسی لیے میں 50ہزار کا چیک پہلی قسط کے طور پر پیش کررہا ہوں اور بقیہ رقم ہر ماہ ادا کرتا رہوں گا۔ذرائع کا کہنا تھا کہ مذکورہ افسر اس وقت اعلیٰ ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی کے ناظم امتحانات ہیں جس سے امتحانات پر شکوک وشبہات پیدا ہو گئے ہیں۔