ہزاروں مہاجرین کو بچانے والا  ’ہیرو آف ایجیئن‘ چل بسا

136
ایتھنز: ’ہیرو آف ایجیئن‘ کے نام سے مشہور سرحدی گارڈ کی امدادی کارروائی کرتے ہوئے یادگار تصویر
ایتھنز: ’ہیرو آف ایجیئن‘ کے نام سے مشہور سرحدی گارڈ کی امدادی کارروائی کرتے ہوئے یادگار تصویر

ایتھنز (انٹرنیشنل ڈیسک) 2015ء میں ہزاروں مہاجرین کو بحیرہ ایجیئن میں ڈوبنے سے بچانے والے کوسٹ گارڈ لیفٹیننٹ کیریا کوس پاپاڈوپولوس کادل کا دورہ پڑنے سے انتقال ہوگیا۔ انہیں پناہ گزینوں کی زندگیاں بچانے کی وجہ سے ’ہیرو آف ایجیئن‘ کہا جاتا تھا۔ کیریا کی عمر 44 برس تھی۔ وہ 2015ء میں مہاجرین کے بحران کے دوران اپنے جہاز کو لے سمندر میں نکل جاتے اور ربڑ کی ناقص کشتیوںکے ڈوبنے پر رکین وطن کی زندگیاں بچایا کرتے تھے، جو ترکی سے یونان کے درمیان خطرناک سمندری راستے کو عبور کرنے کی کوشش کررہے ہوتیتھے۔ یونانی جزیرہ لیسبوس ترکی سے یورپ پہنچنے والے مہاجرین کے لیے داخلے کا ترجیحی مقام تھا۔ لیکن سمندری راستے سے یونانی جزائر تک پہنچنے کے سفر میں کئی سو افراد ڈوب کر ہلاک بھی ہوئے اور بہت سے لاپتاہو گئے۔
ہیرو آف ایجیئن

Print Friendly, PDF & Email
حصہ