پاک ،چین :سست چیک پوسٹ پر مشترکہ دفتر برائے سرحدی روابط کا قیام

25

اسلام آباد(آ ن لائن)چینی نیشنل نارکوٹکس کنٹرول کمیٹی(این این سی سی)اورپاکستانی اینٹی نار کو ٹکس فورس(اے این ایف)نے اے این ایف کی سست چیک پوسٹ پر مشترکہ دفتر برائے سرحدی روابط کے قیام کی افتتاحی تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں ڈپٹی سیکرٹری برائے چینی این این سی سی وی زیاؤ جن، یو این او ڈی سی کے دفتر برائے جنوب مشرقی ایشیائی ممالک جرمی ڈوگلاز، یو این او ڈی سی کے نمائندہ برائے پاکستان سیزر گوڈیز، ڈی جی اے این ایف میجر جنرل مسرت نواز ملک ہلال امتیاز(ملٹری)، چینی قانون نافذ کرنے والے اداروں کے نمائندگان، کسٹمز پاکستان ، قومی ادارہ احتساب پاکستان کے
نمائندگان، گلگت بلتستان کے مقامی سرکاری حکام اور پرنٹ و الیکٹرونک میڈیا کے نمائندگان نے شرکت کی۔ ڈی جی اے این ایف نے تمام مہمانان کو گرمجوشی سے خوش آمدید کہا۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ڈی جی اے این ایف نے کہا کہ اس مشترکہ نظام کے قیام سے دونوں ممالک کو اس بارڈر پر منشیات اور ممنوع کیمیائی مواد کی ترسیل کو روکنے میں مدد ملے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس نظام کے قیام کی کوششوں کا سہرا چینی این این سی سی کے ڈپٹی سیکرٹری کے سرہے۔انہوں نے اس بات کی وضاحت کی کہ پاک چین دوستی کی بنیاد مضبوط باہمی اعتماد، بہترین تعاون اور انسدادمنشیات کی کارروائیوں سمیت دیگر علاقائی اور عالمی معاملات پر ہم مرکز خیالات میں گڑھی ہوئی ہے۔ ڈی جی اے این ایف نے پاکستانی حکومت کے خطے اور پوری دنیا سے منشیات کے خاتمے کے عزم کی یقین دہانی کرائی۔انہوں نے مزید بتایا کہ اس مشترکہ دفتر برائے سرحدی روابط کے نظام کا قیام دونوں ملکوں کی حکومتوں کے اس عزم اور مضبوط سیاسی بصیرت کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ ڈی جی این ایف نے کہا کہ اس عزم کے تسلسل میں اے این ایف نے سال 2017کے دوران 412 ٹن منشیات جبکہ سال 2018 کے دوران اب تک 178 ٹن منشیات برآمد کی۔ڈی جی نے بتایا کہ عالمی مسائل کا مقابلہ عالمی طریقوں سے ہی ممکن ہے جو کہ مناسب اور بروقت بین الاقوامی تعاون اور اصولوں سے ہی ممکن ہیں،بین الاقوامی سرحدوں پر منشیات کی ترسیل کے معاملے کی سنگینی کے پیش نظرکوئی بھی ملک تنہا اس معاملے سے نمٹ نہیں سکتا۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ

جواب چھوڑ دیں

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.