گھارو، مقامی زمینداروں کا محکمہ آبپاشی اور بااثر شخص کیخلاف احتجاج

65

گھارو (نمائندہ جسارت) گھارو کے قریب دیہہ پلیجانی میں بااثر زمیندار کا محکمہ آبپاشی کے عملے کی ملی بھگت سے واٹر کورس 24 . R پر قبضہ، کئی سال سے آباد سیکڑوں ایکڑ زرعی اراضی بنجر بن گئی، مقامی زمینداروں کا محکمہ آبپاشی اور بااثر شخص کیخلاف شدید احتجاج۔ دیہہ پلیجانی کے برٹش کے دور سے قائم واٹر کورس کریو خالق ڈنو تھہیم کی 24.R پر ایک بااثر شخص کی جانب سے قبضہ کرکے مکمل بند کرنے کیخلاف مقامی زمیندار گلزار شاہ، حنیف تھہیم، نور حس پلیجو، امام دین تھہیم، غلام محمد جوکھیو، دھنڑی بخش، یوسف تھہیم اور سید اصغر علی شاہ جیلانی کی سربراہی میں سیکڑوں افراد نے اپنی بنجر زمینوں پر احتجاجی مظاہرہ کیا اور محکمہ آبپاشی کے انجینئر کیخلاف سخت نعرے بازی کی۔ اس موقع پر متاثرہ زمینداروں نے کہا کہ برٹش کے دور سے انکا واٹر کورس قائم ہے، جس پر بااثر شخص نے ہتھیاروں کے بل پر قبضہ کرتے ہوئے ہمارا زرعی پانی مکمل طور پر بند کردیا ہے، جو بارہا احتجاج کے باوجود کھولا نہیں جاسکا ہے۔ انہوں نے محکمہ آبپاشی پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ عملہ مذکورہ شخص سے ملا ہوا ہے، جس کہ وجہ سے آج دس ماہ سے انکا زرعی پانی مکمل بند ہے ، ہماری زمینیں بنجر اور ہم کنگال ہوگئے ہیں۔ ہم احتجاج کر کے بھی تھک گئے، ہماری دہائی کوئی سننے کے لیے تیار نہیں۔ انہوں نے واٹر کمیشن سربراہ امیر ہانی مسلم، گورنر، وزیر اعلیٰ سندھ، صوبائی وزیر آبپاشی، کمشنر حیدر آباد ڈی سی ٹھٹھہ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ فوری مذکورہ معاملے کی شفاف تحقیقات کا حکم صادر فرمائیں اور انہیں انصاف فراہم کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ