پاکستان انسداد بدعنوانی میں رول ماڈل کی حیثیت رکھتا ہے، چیئرمین نیب

46
اسلام آباد: چیئرمین نیب جاوید اقبال کی زیرصدارت نیب افسران کا اجلاس ہورہا ہے
اسلام آباد: چیئرمین نیب جاوید اقبال کی زیرصدارت نیب افسران کا اجلاس ہورہا ہے

اسلام آباد (اے پی پی)قومی احتساب بیورو (نیب) کے چیئرمین جسٹس(ر) جاوید اقبال نے کہا ہے کہ بدعنوانی تمام برائیوں کی جڑ ہے جو کہ کینسر کی طرح ملک کو نقصان پہنچاتی ہے، آہنی ہاتھوں سے بدعنوانی کا خاتمہ نیب کی اولین ترجیح ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے نیب ہیڈ کوارٹرز میں نیب کے تمام شعبوں کی کارکردگی کے متعلق جائزہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہاکہ ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ میں بھی پاکستان کرپشن پرسپشن انڈیکس میں 126 سے 116 ویں نمبر پر آ گیا ہے، پاکستان بدعنوانی کے خاتمے کے حوالے سے سارک ممالک کیلیے رول ماڈل کی حیثیت رکھتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نیب نے بالخصوص 3مرحلوں میں شکایت کی جانچ پڑتال، انکوائری اور انویسٹی گیشن پر مشتمل آپریشنل طریقہ کار وضع کرکے انسداد بدعنوانی کی موثر حکمت عملی تشکیل دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نیب کو 2017ء کے اس عرصے کے مقابلے میں 2018ء میں دگنی شکایات موصول ہوئی ہیں، شکایات کی تعداد میں اضافے سے اس بات کا اظہار ہوتا ہے کہ نیب کے تمام افسران بھرپور انداز میں اپنے فرائض سرانجام دے رہے ہیں ، اس سے عوام کا نیب پر اعتماد کا اظہار بھی ہوتا ہے۔ پلڈاٹ نے اپنی حالیہ رپورٹ میں کہا ہے کہ نیب پر 42 فیصد لوگ، پولیس پر 30 فیصد جبکہ سرکاری افسران پر 29 فیصد لوگ اعتماد کرتے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
حصہ