نیوکراچی: فیکٹری کے ٹینک سے تشددزدہ لاش برآمد

33

کراچی (اسٹاف رپورٹر )نیو کراچی میں فیکٹری کے زیر زمین پانی کے ٹینک سے ایک شخص کی تشدد زدہ لاش ملی ہے۔پولیس واقعہ کو خودکشی قرار دے رہی ہے۔ تفصیلات کے مطابق نیو کراچی کے علاقے سیکٹر 11/Eعلی محمد گوٹھ میں واقع فیکٹری میں موجود زیر زمین پانی کے ٹینک سے ہفتے کی صبح ایک شخص کی خون میں لت پت لاش ملی ،جس کی اطلاع پر پولیس نے موقع پر پہنچ کر لاش کو تحویل میں لینے کے بعد عباسی اسپتال منتقل کردیا ،جہاں پر اس کی شناخت 27سالہ وسیم ولد سلیم کے نام سے کی گئی جو کہ سرجانی کا رہائشی تھا ،پولیس کے مطابق لاش کی برآمدگی کے بعد پولیس نے فیکٹری میں نصب سی سی ٹی وی کیمروں کی ریکارڈنگ بھی تحویل میں لے لی ، سی سی ٹی وی فوٹیج کا جائزہ لیا گیا تو انتہائی ہولناک انکشاف ہوا ، متوفی ہفتے کی صبح
فجر کے وقت انتہائی پریشانی کے عالم میں ٹہل رہا ہے اور اچانک اس نے ٹیبل پر موجود قینچی اٹھا کر اپنی گردن پر پے درپے 2وار کیے جس کے نتیجے میں خون تیز سے بہنا شروع ہو گیا ،متوفی اس کے بعد باتھ روم کی جانب گیا اور اس نے مزید وار کر کے خود کو شدید زخمی کیا اور باتھ روم کے دروازے کے پاس ہی گرکر تڑپنے لگا ،اسی دوران متوفی نے باتھ روم کے قریب ہی موجود زیر زمین پانی کے ٹینک کا ڈھکن کھولا اور اس میں چھلانگ لگا دی جس کے نتیجے میں وہ ڈوب گیا اور اس کی جان نکل گئی ، اہل خانہ سے بات کی تو انہوں نے بتایا کہ متوفی کا ایک ماہ قبل اپنی بیوی سے جھگڑا ہوا تھا اور وہ اپنے چھوٹے سے بچے کو لے کر چلی گئی تھی جس کے بعد سے متوفی انتہائی ذہنی دباؤمیں مبتلا تھا، پولیس نے کارروائی کے بعد لاش ورثا کے حوالے کردی۔
لاش برآمد

Print Friendly, PDF & Email
حصہ